پی ٹی آئی کی کمزور بکری ہیپی آور میں ایم کیو ایم کو پیاری ہونے پر ورکرز سے معافی مانگتا ہوں، الیکشن کمیشن انتخابات ملتوی کرے: عمران اسماعیل

پی ٹی آئی کی کمزور بکری ہیپی آور میں ایم کیو ایم کو پیاری ہونے پر ورکرز سے ...
پی ٹی آئی کی کمزور بکری ہیپی آور میں ایم کیو ایم کو پیاری ہونے پر ورکرز سے معافی مانگتا ہوں، الیکشن کمیشن انتخابات ملتوی کرے: عمران اسماعیل

  


کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف کے رہنما عمران اسماعیل نے این اے 245 کے امیدوار کے ایم کیو ایم میں شامل ہونے پر ورکرز سے معافی مانگی ہے اور کہا ہے کہ الیکشن سے 6 گھنٹے پہلے لوگوں کی وفاداریاں تبدیل کرائی گئی ہیں جس کا الیکشن کمیشن کو نوٹس لے اور یہاں دوبارہ انتخابات کرائے۔

ہنگامی پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے عمران اسماعیل کا کہنا تھا کہ فاروق ستار نے جسے کمزور بکری کہا تھا اب پی ٹی آئی کی اسی کمزور بکری کو ایم کیو ایم نے ہیپی آور میں خرید لیا ہے، امجداللہ نے پی ٹی آئی کو جھٹکا دیا ہے آج جو ہمارے ساتھ ہوا ہے اس کے بعد مجھے اندازہ ہوا ہے کہ ایم کیو ایم پر جمعرات کتنی بھاری گزرتی ہوگی جب ہر دفعہ کوئی نہ کوئی ایم پی اے پارٹی چھوڑ کرچلا جاتا ہے ۔فاروق ستار سے پوچھتا ہوں کہ پولنگ سے 6 گھنٹے پہلے کیسے کسی بندے کا ضمیر جاگ گیا ایم کیو ایم سے کوئی بندہ جاتا ہے تو آپ اس کی مخالفت پر اتر آتے ہیں اور جب آپ کے پاس کوئی بندہ آجاتا ہے تو ا س کا ضمیر جاگ جاتا ہے۔

انہوں نے پی ٹی آئی کے منحرف امیدوار امجداللہ خان کا الزام مسترد کرتے ہوئے کہا کہ پارٹی نے ان سے ہر قسم کا تعاون کیا ہے ۔ امجداللہ خان خرم شیر زمان کے پاس آئے اور کہا کہ میرے پاس پیسے کم ہیں جس پر انہوں نے اپنی جیب سے کیمپ لگانے کیلئے پیسے دیے ۔

انہوں نے کہا کہ الیکشن کمیشن سے پوچھتا ہوں کہ امجداللہ خان کے والد کی ویڈیو منظر عام پر آچکی ہے اور پی پی کے رہنما عدالت میں بیان دینے کیلئے تیار ہیں تو الیکشن کمیشن کب نوٹس لے گاایسی کیا چیز ہوگئی تھی کہ رات کو الیکشن سے 6 گھنٹے پہلے ایک بندہ الیکشن چھوڑ گیا اور آپ سوتے رہے اگر ایسے ہی لوگوں کی خرید و فروخت ہوتی رہی تو بہتر ہے کہ الیکشن کمیشن کراچی میں پارٹیوں کی سیٹیں مخصوص کردے ۔پی ٹی آئی الیکشن کمیشن سے مطالبہ کرتی ہے کہ اس الیکشن کو ملتوی کرکے دوبارہ نئے امیدواروں کے ساتھ الیکشن کرایا جائے۔

عمران اسماعیل نے اپنے ووٹرز سے معافی مانگتے ہوئے کہا کہ ہمارے پارلیمانی بورڈ نے امجداللہ خان کو ٹکٹ دینے کی مخالفت کی تھی تاہم میں نے ذاتی حیثیت میں عمران خان سے درخواست کی تھی کہ پڑھے لکھے امجداللہ خان کو ٹکٹ جاری کیا جائے۔

مزید : کراچی /اہم خبریں


loading...