کے سی سی آئی کے زیر اہتمام 14ویں ’’مائی کراچی‘‘ نمائش آج شروع ہوگی

کے سی سی آئی کے زیر اہتمام 14ویں ’’مائی کراچی‘‘ نمائش آج شروع ہوگی

کراچی(آن لائن)کرا چی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری(کے سی سی آئی )کے زیر اہتمام 14ویں ’’مائی کراچی‘‘ نمائش جمعہ7اپریل 2017 سے ایکسپو سینٹر کراچی میں منعقد ہو گی جس میں ملکی وغیر ملکی نمائش کنندگان تقریباً 10لاکھ سے زائدافراد کے سامنے اپنی خدمات اور مصنوعات کی تشہیر کریں گے۔وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نمائش کا افتتاح کریں گے۔ نمائش3روز تک جاری رہنے کے بعد ہ9اپریل 2017کو اختتام پذیر ہو گی۔ یہ نمائش بزنس ٹو بزنس اور بزنس ٹو کنزیومر میٹنگز کے حوالے سے ایک بہترین پلیٹ فارم ثابت ہوگی اور ساتھ ہی کراچی کے عوام کو تفریحی سہولتیں بھی میسرآئیں گی۔کراچی کے عوام ہر سال دلچسپی کے ساتھ اس نمائش میں بھرپور شرکت کرتے ہیں۔کراچی چیمبر کے صدر شمیم احمد فرپو نے ’’مائی کراچی‘‘نمائش کے کامیاب سفر پر روشنی ڈالتے ہوئے کہاکہ 2004میں بزنس مین گروپ کے چیئرمین سراج قاسم تیلی نے بحثیت صدر کے سی سی آئی میڈیا بالالخصوص مغربی میڈیاکی جانب سے کراچی کے بارے میں منفی پروپیگنڈہ کومد نظر رکھتے ہوئے کراچی کے مثبت امیج کو اجاگر کرنے کی ضرورت کو محسوس کرتے ہوئے’’ مائی کراچی‘‘ نمائش کا آغاز کیا جو بلاکسی تعطل پابندی کے ساتھ 2004سے کامیابی کے ساتھ منعقد کی جارہی ہے۔

اور یہ ایونٹ کراچی چیمبر کے لئے کامیابی کی علامت بن گیا ہے ۔کے سی سی آئی کے صدر نے’مائی کراچی‘‘نمائش کو ہر سال بہتر بنانے پر کراچی چیمبر کے تمام سابق صدور کی خدمات کو سراہا جنہوں نے ہر بارنمائش کو بہترسے بہتر بنانے پر اپنی بھرپور توجہ مرکوز رکھی جس کی وجہ سے’’مائی کراچی‘‘ نمائش پاکستان کا ایک کامیاب اور سب سے بڑا ایونٹ بن گیاہے اور اب اس کا دائرہ کار ایکسپو سینٹر کے3ہالز سے بڑھ کرتمام 6ہالز تک وسیع ہو گیاہے۔کے سی سی آئی مستقل بنیادوں پر بغیر کسی مالی فوائدکے اس نمائش کاانعقاد کررہاہے جس کامقصد کراچی کے مثبت امیج کو اجاگر کرنے کے ساتھ ساتھ ’’ میڈ اِن پاکستان‘‘ کی ٹیگ لائن کو فروغ دینا ہے۔انہوں نے نمائش کوکامیاب بنانے میں سندھ حکومت ،گورنر سندھ اور ٹریڈ ڈیولپمنٹ اتھارٹی کے تعاون کو بھی سراہا۔انہوں نے کہاکہ ملکی معیشت کو درپیش مسائل کے باوجودتاجر برادری چیلنجز کا سامنا کرتے ہوئے اور کاروباری و صنعتی سرگرمیوں میں رکاوٹوں کو دور کرتے ہوئے ثابت قدم ہے۔انہوں نے کہاکہ 14ویں ’’ مائی کراچی‘‘ نمائش میں مقامی و غیر ملکی تاجر اس سال بھی ایک بار پھر بھرپور طریقے سے شرکت کررہے ہیں۔ روس، بیلاروس، سری لنکا، رومانیہ، یوکرین،ملائیشیا، ایران اور ترکی بھی اس سال ایونٹ میں شرکت کررہے ہیں جبکہ تھائی لینڈ نے بھی 30 اور انڈونیشیا نے بڑے پویلین کے قیام کے لیے 10اسٹالز بک کروائے ہیں۔ انہوں نے اس توقع کا اظہار کیا کہ 14ویں ’’ مائی کراچی‘‘ نمائش پاکستان جو قدرتی خوبصورتی،روایات اور ثقافت کا مرکز ہے کوفروغ دینے کے لئے بہترین موقع فراہم کرے گی باالخصوص کراچی کی حقیقی تجارتی صلاحیت کو دنیا کے سامنے پیش کرنے میں مددگار ثابت ہوگی ۔انہوں نے کہاکہ ’’ مائی کراچی‘‘ نمائش تجارت کی نئی راہیں تلاش کرنے اور علاقائی تجارت کو فروغ دینے کے حوالے سے خصوصی طور پر ڈیزائن کی گئی ہے۔ اس سال فوڈ کورٹ کے رقبے کو کو دگنا کردیا گیا ہے اور بچوں کے کھیلنے کے لیے ایریا میں بھی دورہ کرنے والی فیمیلز کو کئی نئی تفریحی سہولیات میسر ہوں گی۔انہوں نے ٹی ڈی اے پی کی سپورٹ کا خیرمقدم کرتے ہوئے امید ظاہر کی کہ اس سال بھی یہ نمائش مطلوبہ نتائج حاصل کرنے میں کامیاب ہو گی۔ کے سی سی آئی کی’’مائی کراچی‘‘نمائش کی خصوصی کمیٹی کے چیئرمین محمد ادریس نے نمائش میں دستیاب تفریحی سہولتوں اورمختلف انتظامات پر روشنی ڈالتے ہوئے کہاکہ نمائش میں اس سال ایکسپو سینٹر کے تمام ہالز میں تقریبا280اسٹالزقائم کیے گئے ہیں جہاں پاکستانی اور غیر ملکی مصنوعات اور خدمات کی تشہیرکی جائے گی اور اس امر کی کوشش کی جارہی ہے کہ زیادہ سے زیادہ تعداد میں مقامی و غیر ملکی افراد نمائش کا دورہ کریں جس کا مقصد کراچی کا مثبت امیج اجاگر کرناہے کیونکہ کراچی پاکستان کا معاشی و اقتصادی مرکز ہے۔محمد ادریس نے مزید کہاکہ نمائش میں تیسری بار لان فیبرک کا پویلین قائم کیا گیاہے جس میں پاکستان کے معروف برانڈز اپنی ڈیزائنرز لان مصنوعات متعارف کروائیں گے ۔ مزید یہ کہ ایکسپوسینٹر میں مائی کراچی کے دوران آنے والی فیملیز کی تفریح کے لئے فوڈ کورٹ کے قیام کے ساتھ ساتھ پالتو جانوروں اور پرندوں کے شو کے علاوہ آتش بازی کا بھی شانار مظاہرہ کیاجائے گا۔#

#/s#

مزید : کامرس


loading...