حکومت ٹیکس ری فنڈز فوری جاری کرے، راولپنڈی چیمبر

حکومت ٹیکس ری فنڈز فوری جاری کرے، راولپنڈی چیمبر

راولپنڈی (کامرس ڈیسک)راولپنڈی چیمبر کے قائمقام صدرراشد وائیں نے کہا کہ حکومت کیطرف سے ایکسپورٹ ریفنڈ کی ادائیگی نہ ہونے سے برآمدات میں کمی واقع ہو رہی ہے ، ایکسپورٹ ریفنڈ کی ادائیگی میں تاخیر سے ایکسپورٹرز کی حوصلہ شکنی ہوئی ہے جس سے برآمدات کا ہدف حاصل کرنا مشکل ہو گیا ہے ،حکومت اس حوالے سے جامع حکمت عملی اپنائے اور ایکسپورٹ ریفنڈ کی فوری ادائیگی کو یقینی بنائے تا کہ برآمدات کو بڑھانے میں مدد ملے سکے، ان خیالات کا اظہار انہوں نے چیمبرمیں تاجروں کے ایک وفد سے بات چیت کرتے ہوئے کیا اس موقع پر مجلس عاملہ کے اراکین ، تاجر تنظیموں کے نمائندے و دیگر ارکان چیمبر بھی موجو دتھے۔راشد وائیں نے کہا کہ جب تاجر کے پاس کیپٹل نہیں ہو گا تو خریدے گا کیسے ریفنڈ کی تاخیر کی وجہ سے اسٹیٹ بینک کی طرف سے شرح سود میں کی گئی واضح کمی کے ثمرات بھی معدوم ہو گئے ہیں اس صورتحال سے ملکی اقتصادی حالت کو نقصان پہنچ رہا ہے ، جب تک کاروباری برادری کو یقین دہانی نہ کروائی جائے گی اور وعدے پورے نہیں کیے جائیں گے تو ایکسپورٹ کا ہدف حاصل نہیں ہو سکے گا ۔قائمقام صدر نے کہا کہ حکومت موجودہ صورتحال کا سنجیدگی سے نوٹس لے اور اس حوالے سے فوری اور عملی اقدامات اٹھائے ۔

تا کہ برآمدکنندگان کا حوصلہ بڑھا کر برآمدات میں اضافہ کیا جا سکے ، اگر حکومت باقاعدگی کے ساتھ ریفنڈ ادا کرے گی تو کاروباری برادری بینکوں سے قرضہ لے کر کاروبار کو وسیع کر گی جس سے مجموعی طور پر کاروبار ی سرگرمیاں بڑھیں گی، روزگار کے نئے مواقع پیدا ہونگے اور برآمدات میں اضافہ ہو گا ۔ راشد وائیں نے کہا کہ ٹیکسوں کی وصولی کے نام پر تاجروں کو ہراساں نہ کیا جائے مارکیٹوں اور کاروباری مراکز پر چھاپوں سے حکومت کا اپنا امیج خراب ہو رہا ہے حکومت ٹیکس فائلرز کو ٹیکس آڈٹ سے مستثنیٰ قرار دے، ایف بی آر ، ریونیو اتھارٹی کا عملہ اور ٹیکس حکام ٹارگٹ پورے کرنے کے چکر میں اپنے اختیارات سے تجاوز نہ کریں ٹیکس آڈٹ پر ہمارے تحفظات ہیں حکومت نان فائلرز کے لیے تو کوئی آڈٹ نہیں لاتی بلکہ پہلے سے ٹیکس گزار کو بار با ر ٹیکس آڈٹ کے نوٹسسز مل رہے ہیں اور بعض تاجروں کو ہر سال آڈٹ کے نوٹس بھی مل رہے ہیں

اس سے تاجروں میں شدید بے چینی ہے

مزید : کامرس


loading...