ہمارے دوست ملک نوید بھی رخصت ہوگئے

ہمارے دوست ملک نوید بھی رخصت ہوگئے
 ہمارے دوست ملک نوید بھی رخصت ہوگئے

  


رات گئے وفاقی دارالحکومت سے واپس لاہور پہنچے ہیں، اسلام آباد سے ہم تقریباً چار بجے نکلے، موٹر وے پر گاڑی داخل ہوئی، تو ہلکی ہلکی بارش تھی موٹر وے لاہور کے بیچوں بیچ سڑک پر دھواں سا اٹھتا نظر آیا، قریب پہنچے گاڑی میں آگ لگی نظر آئی بہت سے لوگ گاڑی کے گرد جمع تھے، کوئی تصویر بنارہا تھا تو کوئی حیرت سے جلتی گاڑی کو دیکھ رہا تھا، ہمیں حیرت ہوئی کہ کوئی بھی آگ بجھانے کی کوشش نہیں کر رہا تھا اور ہمیں لاہور پہنچنا تھا، اس لئے ہم نے آگے بڑھنے میں ہی عافیت سمجھی اور موٹروے ٹول پلازہ کراس کیا، تو بارش شروع ہو گئی، جو لاہور تک وقفے وقفے سے جاری رہی، کبھی نرمی دکھاتی رہی، تو کبھی جوشیلے پن سے اپنی ادائیں دکھاتی رہی، اور تو اور رستے میں اسلام آباد سے لاہور آتے موٹر وے پر دو دفعہ اولے بھی پڑے اور ہم سب بے ساختہ مری کے سہانے مناظر سے تشبیہ دینے لگے، تاہم کوئی پانچ گھنٹے کی مسافت کے بعد لاہور پہنچے ہمارے ساتھ شیخ نواز اور فیصل بٹ بھی تھے، تاہم بتلاتے چلیں کہ جب ہم لاہور سے اسلام آباد کے لئے نکلے، پھر بھی بارش ہورہی تھی اور جب واپس آرہے تھے، تب بھی بارش اپنے رنگ بکھیر رہی تھی، تاہم بتلاتے چلیں کہ اسلام آباد تو ہمارا آنا جانا رہتا ہے، لیکن اس دفعہ دیر بعد چکر لگا،جی ہاں ہمارا آنا جا نا رہتا ہے، اسلام آباد تاہم اس دفعہ ہمیں ایمرجنسی اسلام آباد جانا پڑا، جی ہاں وہ اس لئے کہ ہمارے بہت ہی پیارے دوست ملک نوید دنیا سے رخصت ہو گئے، میں تقریباً آٹھ دس سال سے جانتا ہوں، کچھ عرصہ پہلے ان کی والدہ کا انتقال ہوا تھا، تاہم ہماری مرحوم نوید ملک سے ملاقات جناب خرم ملک کے توسط سے ہوئی اور بتلاتے چلیں کہ خرم ملک نے روزنامہ جناح اسلام آباد میں بطور کرائم رپورٹر اپنے صحافتی سفر کا آغاز کیا اور اپنی محنت و قابلیت کے بل پر روزنامہ جناح میں پہلے چیف رپورٹر پھر

ایڈیٹر کوارڈینیشن کے فرائض بھی سر انجام دئیے۔ تاہم جب بھی جناب خرم ملک سے ملاقات ہوتی ہے، تو اکثر اپنا دکھڑا لے کے بیٹھ جاتے ہیں کہ فیصل صاحب جناح میں میری تنخواہ دس لاکھ بنتی ہے، جو ادارے کی طرف واجب الادا ہے۔ ملک ریاض صاحب سے سفارش کروا دیں کہ تنخواہ ہی دے دیں، لیکن ہم ہنس کر خرم ملک کی بات کا رخ کسی اور طرف موڑ دیتے تھے، تو بہت حال بات ہو رہی تھی، ہمارے پیارے بھائی مرحوم ملک نوید کی تو یقیناً انتہائی ملنسار بااخلاق خوش گفتار اور ہنستی مسکراتی، شخصیت کا مالک ملک نوید سب دوستوں کو چھوڑ گیا اور ہمیں یہ اطلاع خرم ملک نے بذریعہ ایس ایم ایس صبح تین بجے دی اور جیسے ہی اطلاع ملی ،ہم اسلا م آباد کی طرف بھاگے رات اسلام آباد دیر سے پہنچے تھے، اس لئے ارادہ تھا کہ ختم قرآن اور دعا میں ضرور شامل ہو ں گے، دعا میں شامل ہوئے۔ لیکن قدرت کے آگے کس کا زور ہے، جی ہاں دوستوں ہم کچھ کریں نہ کریں، لیکن دعا تو کرسکتے ہیں کہ اللہ پاک ہمارے پیارے دوست اور بھائی ملک نوید کے گناہوں کو معاف فرمائے۔ انہیں جنت میں اعلیٰ مقام عطا فرمائے اور باقی سب کی بھی مغفرت فرمائے جو دنیا سے رخصت ہوگئے ہیں، آمین ثم آمین

مزید : کالم


loading...