ایران کے جوہری پروگرام پر معاہدہ تاریخ کا بدترین سمجھوتہ ہے: ٹرمپ

ایران کے جوہری پروگرام پر معاہدہ تاریخ کا بدترین سمجھوتہ ہے: ٹرمپ

واشنگٹن(این این آئی)امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اردنی فرمانروا کو یقین دلایا ہے کہ ان کی حکومت پناہ گزینوں کا بوجھ اٹھانے میں عمان کی ہر ممکن مدد کرے گی۔میڈیارپورٹس کے مطابق امریکی دورے پرآئے اردنی فرمانروا شاہ عبداللہ دوم کے ساتھ ملاقات کے بعد ایک مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے صدر ٹرمپ نے کہا کہ ادلب میں بے گناہ شہریوں پر کیمیائی گیس کے ذریعے حملہ کرکے اسد رجیم نے تمام حدیں پھلانگ ڈالی ہیں۔انہوں نے شام میں مبینہ طور پر اسد رجیم کے جنگی طیاروں سے ادلب میں کیمیائی گیس کے حملے کی شدید مذمت کرتے ہوئے اسے جنگی جرم قرار دیا۔انہوں نے کہا کہ امریکا اردن کے ساتھ تمام شعبوں میں تعلقات کو مزید تقویت دے گا۔ صدر ٹرمپ نے یقین دلایا کہ پناہ گزینوں کا بوجھ اٹھانے میں امریکا اردن کی ہر ممکن مدد کرے گا۔شام کے حلب شہر میں ہونے والے کیمیائی حملے کی شدید مذمت کرتے ہوئے صدر ٹرمپ نے اسے انتہائی شرمناک قرار دیا۔ انہوں نیکہا کہ اسد رجیم نے اپنے اقتدار کی بقاء کے لیے وحشت اور بربریت کی تمام حدیں پھلانگ ڈالی ہیں۔انہوں نے اسد رجیم کو ڈھیل دینے پر سابق صدر باراک اوباما کی انتظامیہ کو بھی کڑی تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ صدر اوباما کی طرف سے شام کے کیمیائی ہتھیاروں کے بارے میں دھمکی آمیز دعوے محض ڈھونگ تھے۔ایک سوال کے جواب میں ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا کہ ادلب میں کیمیائی حملے کے بعد بشارالاسد کے باریمیں میری پالیسی تبدیل ہوگئی ہے۔امریکی صدر کا کہنا تھا کہ اردنی فرمانروا شاہ عبداللہ دوم کے ساتھ ہونے والی بات چیت میں فلسطینیوں اور اسرائیلیوں کیدرمیان امن بات چیت کی بحالی پر بھی بات چیت کی گئی۔ اس موقع پر دونوں رہ نماؤں نے فلسطینی انتظامیہ اور اسرائیل کو مذاکرات کی میز پرلانے کے لیے کوششیں جاری رکھنے کے عزم کا اظہار کیا۔

اس موقع پر بات کرتے ہوئے اردنی فرمانروا نے کہا کہ دنیا کو مشترکہ چیلنجز اور سلامتی کے مسائل کا سامنا ہے۔ انہوں نے شام کے بحران کے سیاسی حل کی ضرورت پر زور دیا اور کہا کہ تمام ممالک کی ذمہ داری ہے کہ وہ شام کے بحران کے پرامن حل کے لیے مساعی تیز کریں۔شاہ عبداللہ دوم نے ادلب میں خان الشیخون کے مقام پر کیے گئے کیمیائی حملے کی شدید مذمت کی اور کہا کہ یہ حملہ عالمی سفارت کاری کی ناکامی کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ انہوں نے کہا کہ مجھے یقین ہیکہ ڈونلڈ ٹرمپ بشار الاسد کو ایسی جارحیت کی دوبارہ اجازت نہیں دیں گے۔پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا کہ ایران اور عالمی طاقتوں کیدرمیان تہران کے متنازع جوہری پروگرام پر طے پائے معاہدے کے حوالے سے وہ ہرممکن اقدام کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ ایران کے جوہری پروگرام پر معاہدہ تاریخ کا بدترین سمجھوتہ ہے۔ایک سوال کے جواب میں صدر ٹرمپ کا کہنا تھا کہ داعش پوری دنیا کے لیے خطرہ ہے اور اسے نمٹنے کے لیے عالمی برادری کو مل کر کام کرنا ہوگا۔

مزید : عالمی منظر


loading...