وکلا ء کوہائیکورٹ میں شروع ہونیوالے انٹر پرائز لیول آئیٹی سسٹم پر بریفنگ

وکلا ء کوہائیکورٹ میں شروع ہونیوالے انٹر پرائز لیول آئیٹی سسٹم پر بریفنگ

لاہور(نامہ نگار خصوصی )چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ مسٹر جسٹس سیدمنصور علی شاہ سے وکلاء رہنماؤں کے وفد نے ملاقات کی، چیف جسٹس نے وکلاء رہنماوں کو 10 اپریل سے لاہور ہائی کورٹ میں شروع ہونے والے انٹر پرائز لیول آئی ٹی سسٹم کے خدوخال سے متعلق آگاہ کیا، چیف جسٹس نے مزید کہا کہ انٹر پرائز آئی ٹی سسٹم کے آغاز سے وکلاء کا سی سی نمبر ختم ہو جائے گا اور اس کی جگہ وکلاء کا قومی شناختی کارڈ نمبر بطور سی سی نمبر استعمال ہوگا جس سے صوبہ بھر میں وکیل کی ایک مخصوص شناخت ہوگی جو ہر سطح پر وکلاء کے لئے آسانی کا باعث بنے گی، انہوں نے مزید بتایا کہ مذکورہ سسٹم نادرا کے ڈیٹا بیس سے منسلک ہوگا۔ چیف جسٹس نے بار نمائندوں کو بتایا کہ مذکورہ آئی ٹی سسٹم کے ذریعے وکلاء و سائلین کو کیس کی ہر سٹیج مثلا کیس فائلنگ، ڈائری نمبر، فکسیشن، سماعت اور عدالتی مختصر حکم نامہ ایس ایم ایس کیا جائے گا۔ سسٹم کی بدولت آن لان کیس فائلنگ بھی ممکن ہو سکے گی جبکہ جعلی ناموں سے مقدمات کی دائری ختم ہو جائے گی۔ چیف جسٹس کا مزید کہنا تھا کہ عوام کی سیکیورٹی اور سہولت کے پیش نظر اوتھ کمشنر شیڈ اور کاپی برانچ لاہور ہائی کورٹ میں متبادل،جگہ پر شفٹ کئے جا رہے ہیں۔ وکلاء رہنماؤں کے وفد نے وکلاء اور عوام کے لئے لاہور ہائی کورٹ کی جانب سے اٹھائے جانے والے اقدامات کی بھرپور حمایت کی اور سراہا۔ملاقات کرنے والوں میں سیکرٹری سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن آفتاب احمد باجوہ، چیئرمین ایگزیکٹو کمیٹی پنجاب بار کونسل سید عظمت بخاری، صدر ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن راولپنڈی ظفر محمود مغل، نائب صدر بلال رضا، صدر ہائی کورٹ بار بہاولپور نوازش علی پیرزادہ، سیکرٹری لاہور ہائی کورٹ بار عامر سعید راں، فنانس سیکرٹری ظہیر بٹ اور صدر لاہور بار ایسوسی ایشن چودھری تنویر احمد شامل تھے۔

سسٹم بریفنگ

مزید : علاقائی


loading...