سی پیک پر صوبوں کے تحفظات دور کر دیئے

سی پیک پر صوبوں کے تحفظات دور کر دیئے
 سی پیک پر صوبوں کے تحفظات دور کر دیئے

  


اسلام آباد (صباح نیوز) وفاقی وزیر ترقی و منصوبہ بندی احسن اقبال نے کہا ہے کہ سی پیک پر تمام صوبوں کے تحفظات دور کر دیے گئے ہیں سعودی اتحاد ایران یا کسی اور دوسرے مسلم ملک کے خلاف نہیں جنرل راحیل شریف کا اس اتحاد کا سربراہ ہونا پاکستان کے لیے اعزاز کی بات ہے ایک انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ 2013کے مقابلے میں آج پاکستان میں سیکورٹی کی صورتحال میں نمایاں بہتری ہے اس بہتری کو پاکستان میں ہی نہیں عالمی سطح پر محسوس کیا جا رہا ہے تاہم سیکورٹی کی صورتحال میں مذید بہتری لانے کی ضرورت ہے اس کے لیے ہمیں ملکر کام کرنا ہو گا دہشتگردی کے حملوں کا مقصد ہمارے حوصلے پست کرنا ہے تاہم اسطرح کے بزدلانہ حملوں سے ہمارے حوصلے متزلزل نہیں کیے جا سکتے وفاقی وزیر نے کہا کہ سوشل میڈیا پر جاری نفرت انگیز سرگرمیوں پر حکومت غور کر رہی ہے انہوں نے کہا کہ ایک دوسرے پر انگلی اٹھانے کی بجائے ملک کی ترقی کے لیے سب کو ملکر کام کرنا ہو گا دہشتگردی کے خلاف جنگ کو ہم نے بحیثیت قوم ملکر جیتنا ہے انہوں نے کہا کہ پاکستان کے چیلنجز بہت بڑے ہیں حکومت اور وزیر اعظم کی پالیسی ہے کہ ہمیں مثبت سیاست کرنی چاہیے انہوں نے کہا کہ سی پیک پر تمام صوبوں کے تحفظات دور کر دیے گئے ہیں اور آج وہ بہت خوش ہیں کہ انہیں اپنا حصہ مل رہا ہے اگر کسی صوبے کو کوئی شکایت ہو تو وہ سی سی آئی کا اجلاس طلب کر سکتا ہے اور اس میں ان کی شکایت رفع کی جا سکتی ہیں ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ سعودی اتحاد کسی مسلمان ملک کے خلاف نہیں اس اتحاد کا مقصد مسلم ممالک کو دہشتگردی اور جارحیت سے محفوظ رکھا جائے اگر جنرل راحیل شریف کو 39ممالک کے اتحا د کا سربراہ مقرر کیا گیا ہے تو یہ ہمارے لیے اعزاز کی بات ہے ۔

احسن اقبال

مزید : صفحہ اول


loading...