ہم بتائیں گے کہ متحدہ ہ کے لوگ ارب پتی کیسے بنے : خورشید شاہ

ہم بتائیں گے کہ متحدہ ہ کے لوگ ارب پتی کیسے بنے : خورشید شاہ

سکھر(بیورو رپورٹ)پاکستان پیپلزپارٹی کے رہنما اور قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف سید خورشید احمد شاہ نے کہا ہے کہ ایم کیو ایم کا وائٹ پیپر جاری کرنا سورج کو چراغ دکھانے کے مترادف ہے جب کہ میں سیاستدان ہوں منہ نہ کھلوائیں یہ لوگ تو بھتے کے لیے فیکٹری کو آگ لگا دیتے ہیں۔ منی لانڈرنگ میں بھی ملوث ہیں کچھ بھاگ گئے کچھ ارب پتی بن گئے ہیں۔ آئی جی سندھ اچھا افسر ہے ، لیکن اسے ہٹانا سندھ حکومت کا اختیار ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعہ کو سکھر میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا ۔سید خورشید احمد شاہ نے کہا کہ کاپی کلچر کی لعنت کو جڑ سے اکھاڑنا وقت کی ضرورت ہے لیکن سکھر کے اسکولوں میں اچھے اساتذہ نہیں، جام صادق کے وزارت اعلی کے دور میں آٹھ جماعتیں پاس استاد مقرر کئے گئے تاہم ہم چاہتے ہیں کہ ہمارہ معاشرہ پڑھا لکھا معاشرہ ہو، اب سندھ کا سیکریٹری اچھا اور پڑھا لکھا آیا ہے۔ایم کیو ایم کے وائٹ پیپر کے حوالے سے پوچھے گئے ایک سوال میں جواب میں خورشید شاہ نے کہا کہ ایم کیو ایم کا وائٹ پیپر جاری کرنا سورج کو چراغ دکھانے کے مترادف ہے، ایم کیو ایم کے کچھ لوگ منی لانڈرنگ میں ملوث ہیں اور کچھ بھاگ گئے جب کہ کچھ ارب پتی بن گئے۔ انہوں نے کہا کہ سیاستدان ہوں منہ نہ کھلوائیں یہ لوگ تو بھتے کے لیے فیکٹری کو آگ لگا دیتے ہیں، ایم کیو ایم کے لوگ اربوں پتی کیسے بنے یہ اب ہم بتائیں گے ۔انہوں نے کہا کہ آئی جی سندھ اچھا افسر ہے لیکن ہٹانا سندھ حکومت کا کام ہے۔ انہوں نے کہا کہ میڈیا کو پنجاب نظر نہیں آتا، صرف ہمارا کچرا نظر آتا ہے، اس بار الیکشن میں پیپلزپارٹی پنجاب میں نواز لیگ کو ٹف ٹائم دے گی، پیپلزپارٹی نے ہی 2014 میں کنٹینر والوں کو مسترد کیا اور وزیر اعظم کو جمہوری وزیراعظم ڈکلیئر کرکے پارلیمینٹ کا ساتھ دیا تھا۔

مزید : کراچی صفحہ اول


loading...