ادبی میلے کی افتتاحی تقریب میں ملتان کے ادیبوں کو نظر انداز کرنے پر تنقید

ادبی میلے کی افتتاحی تقریب میں ملتان کے ادیبوں کو نظر انداز کرنے پر تنقید

ملتان(سٹاف رپورٹر)زکریا یونیورسٹی میں دوروزہ ملتان ادبی میلے کی افتتاحی تقریب میں ملتان سمیت جنوبی پنجاب کے ممتاز ادیبوں اور شاعروں کو نظر انداز کرنے پر ادبی حلقوں نے تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ یونیورسٹی انتظامیہ نے بھی اپنے طور پر ادبی میلے میں خطے کے ادیبوں اور شاعروں کو مدعو کرنے کی بجائے اسی مخصوص گروپ کو آگے کیا جس نے حسب روایت من مانی کرتے ہوئے خطے (بقیہ نمبر16صفحہ12پر )

کے نامور ادیبوں کو نظر انداز کیا جس کے باعث ادبی میلے کی افتتاحی تقریب میں جناح آڈیٹوریم کی بیشتر نشستیں خالی تھیں ‘ گنتی کے چند ادیب تقریب میں شریک تھے ‘ ملتان پر کلیدی مقالے کے لئے بھی لاہور سے اصغر ندیم سید کو مدعو کیا گیاحالانکہ اس کے لئے ملتان سے ہی یونیورسٹی انتظامیہ کو کسی شاعرو ادیب کو مدعو کرنا چاہئیے تھا‘ یہ بات قابل ذکر ہے کہ اصغر ندیم سید نے تقریب میں پہنائی گئی سرائیکی اجرک اتار کر خطاب کیا ‘ادبی حلقوں کے مطابق خطے کے شاکر شجاع آبادی‘ ڈاکٹر شمیم حیدر ترمذی‘ وسیم ممتاز ایڈووکیٹ‘ ڈاکٹر محمد امین‘ ڈاکٹر رزاق شاہد‘ ڈاکٹر طاہر تونسوی او عاشق بزدار سمیت دیگر ادیبوں اور شاعروں کو مدعونہ کرکے اچھا نہیں کیا گیا ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...