’’اورک ‘‘ فعال نہ ہو سکا ‘ جامعہ زکریا ساڑھے 6کروڑ کے پراجیکٹس سے محروم

’’اورک ‘‘ فعال نہ ہو سکا ‘ جامعہ زکریا ساڑھے 6کروڑ کے پراجیکٹس سے محروم

ملتان(سٹاف رپورٹر) زکریا یونیورسٹی میں اورک فعال نہ ہوسکا ، ایچ ای سی نے ساڑھے چھ کروڑ کے پراجیکٹ مسترد کردئے ،بتایا گیا ہے کہ ایچ ای سی ہر برس تمام یونیورسٹیوں سے (بقیہ نمبر21صفحہ12پر )

ریسرچ پراجیکٹس طلب کرتا ہے جس میں سکروٹنی کے بعد کامیاب ہونے والے ہر پراجیکٹ کو 10 لاکھ روپے دئے جاتے ہیں ، زکریا یونیورسٹی سے 67 پرا جیکٹس بھجوائے گئے جو ایچ ای سی نے ٹیکنیکل بنیادوں پر مسترد کردئے ہیں اس طرح یونیورسٹی ساڑھے چھ کروڑ کے پراجیکٹس سے محروم ہوگئی ہے ،ذرائع کا کہنا ہے کہ زکریا یونیورسٹی آج تک اورک (آفس ریسرچ انوویشن اینڈ کمرشلائزیشن ) کو فعال نہیں کرسکی ، اس کا سٹرکچر سینڈیکیٹ سے تاحال منظور نہیں ہوسکا ہے ، صرف ڈائریکٹر تعینات کئے جاتے رہیں جن کی دلچسپی نہ ہونے کے برابر رہی ہے ، جس وقت یہ پراجیکٹس بھجوائے گئے ‘اس وقت ڈاکٹر اعجاز احمد ڈائریکٹر تھے ‘ان کو چند اساتذہ نے اس بارے میں آ گاہ کیامگر انہوں نے ریٹائرمنٹ قریب ہونے کی وجہ سے دلچسپی نہیں لی اور پراجیکٹس ضائع ہوگئے‘اس بارے میں ایچ ای سی نے بتایا کہ زکریا یونیورسٹی کے پراجیکٹس کو ٹیکنیکل بنیادوں پر مستر د کیا گیا ‘ان کے ساتھ جو اورک کے پرفارمے لگائے گئے تھے‘ وہ مکمل نہیں تھے،علاوہ ازیں زکریا یونیورسٹی کے اورک کو ایچ ای سی نے تاحال نوٹیفائی نہیں کیا گیاکیونکہ یونیورسٹی حکام نے اس کی سینڈیکیٹ سے منظوری نہیں لی او ر نہ ہی کوئی ایسا مراسلہ ارسال کیا ، ان پراجیکٹس کے بارے میں موجودہ ڈائریکٹر ڈاکٹر سعیداختر نے رابطہ کیا تو ان کوبتایا گیا ہے کہ وقت ختم ہوگیا ہے ‘نئی سکیم لانچ کی جارہی ہے‘ اس میں پراجیکٹس ارسال کریں ، دوسری طرف یونیورسٹی کے اساتذہ نے اورک کو سینڈیکیٹ سے منظور کرانے کا مطالبہ کیا ہے تاکہ آئندہ آنے والے پراجیکٹس کویقینی بنایا جاسکے ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...