پاکستان کو چینی اشیاء کی منڈی نہ بنایا جائے، عبدالرحیم گجر

پاکستان کو چینی اشیاء کی منڈی نہ بنایا جائے، عبدالرحیم گجر

ملتان(جنرل رپورٹر)مرکزی جمعیت اہلحدیث نظریاتی کے سربراہ علامہ عبدالرحیم گجر نے اپنی جماعت مرکزی جمعیت اہلحدیث میں ضم کرنے کا اعلان کر دیا۔ علامہ عبدالرحیم گجر نے چند (بقیہ نمبر35صفحہ12پر )

سال قبل بعض اختلافات کے باعث نظریاتی گروپ بنایا تھا۔ ضم کرنے کا اعلان انہوں نے گزشتہ روز امیر مرکزی جمعیت اہلحدیث پاکستان و سینیٹر علامہ ساجد میر کی موجودگی میں کیا۔ اس موقع پر ان کے سینکڑوں ساتھی بھی موجود تھے۔ بعد ازاں پریس کا نفرنس کرتے ہوئے علامہ ساجد میر کا کہنا تھا کہ پاکستان کو چینی اشیاء کی منڈی نہ بنایا جائے، اپنی انڈسٹری کو پاؤں پر کھڑا کیا جائے، سی پیک کے فوائد عام آدمی تک پہنچائے جائیں۔ اقتصادی راہداری کے لئے صوبوں میں اکنامک زون بنانا ہوں گے۔ اسلامی ممالک کے فوجی اتحاد میں ایران کو بھی شامل کرنا چاہیے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ ملک کا سب سے بڑا مسئلہ دہشت گردی ہے، اس کا خاتمہ اور امن و امان کا قیام ضروری ہے، دہشت گردی کے خاتمے تک سیاسی استحکام و اقتصادی ترقی کا خواب پورا نہیں ہوسکتا۔ انہوں نے کہا کہ کشمیری آج بھی پاکستان کے لیے قربانیاں دے رہے ہیں، کشمیر میںآج بھی شہداء کو پاکستانی پرچم میں دفنایا جاتا ہے مگر ہمارے حکمرانوں نے کشمیر ایشو دنیا بھر میں اجاگر کرنے کے کئی مواقع گنوائے دئیے۔ چیئرمین کشمیر کمیٹی مولانا فضل الرحمٰن کشمیر کیآزادی کے لئے اپنا کردار ادا کریں۔ علامہ ساجد میر کا کہنا تھا کہ بلاگرز کے معاملہ پر جسٹس شوکت صدیقی کا فیصلہ قابل تحسین ہے مگر گستاحانہ مواد کے حوالے سے حکومت نے مایوس کیا ہے۔ سوشل میڈیا پر توہین آمیز سرگرمیاں بند کرائی جائیں۔ ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ الیکشن سے قبل مذہبی جماعتوں کے اتحاد کا امکان ہے، مذہبی جماعتوں کے اتحاد کے بعد کسی جماعت کی حمایت نہیں کریں گے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...