اٹک،گرلز سکول نہ ہونے سے سوجھنڈا کی بچیاں تعلیم سے محروم

اٹک،گرلز سکول نہ ہونے سے سوجھنڈا کی بچیاں تعلیم سے محروم

اٹک(نمائندہ پاکستان)وزیر اعلیٰ پنجاب کا پڑھو پنجاب بڑھوپنجاب کے دعوؤں کی قلعی کھل گئی ،اٹک سے 45کلومیٹر دور سوجھنڈا میں گرلز ہائی سکول نہ ہونے سے گریڈ 5اورگریڈ 8کی 145بچیاں تعلیم جاری رکھنے سے محروم ، ضلعی ہیڈ کوارٹر پر والدین کے ہمراہ احتجاج ، سکول کی بلڈنگ اور ٹیچر دینے کا مطالبہ، تفصیلات کے مطابق اٹک سے 45کلومیٹر دور سوجھنڈا میں گرلز ہائی سکول نہ ہونے سے گریڈ 5اورگریڈ 8کی 145بچیاں نے ضلعی ہیڈ کوارٹر پر احتجاج کیا ، تھانہ سٹی پولیس موقع پر پہنچ گئی ، مسلم لیگ ن کے ورکز کی جانب سے ااحتجاج روکنے کی کوشش کی گئی ، بچیوں نے اپنا حق لئے بغیر واپس جانے سے انکار کر دیا اور مطالبہ کیا کہ کئی سالوں سے علاقہ میں گرلز ہائی سکول بنانے کا کہا جارہا ہے مگر ضلعی انتظامیہ کی جانب سے کوئی توجہ نہیں دی جارہی آج جب ہم اچھے نمبروں سے پاس ہو کر اگلی کلاسوں میں جانے لگیں تو ہمارے پاس نہ ہی سکول کی بلڈنگ ہے اور نہ ٹیچر زہیں ایک سکول پرائمری ہے جس میں صرف ایک ٹیچر ہے بلڈنگ میں گنجائش سے زیادہ لڑکیاں ہونے کی وجہ سے پرائمری سکول کی ٹیچر سکول داخلے پر پابندی لگا دی ہے جس سے آج مجبور ہو کر احتجاج کررہی ہیں ، بچیوں کے والدین کا کہا تھا کہ ہماری بچیاں تعلیم کو جاری رکھنا چاہتی ہیں ان کا کیا قصور ہے کہ ان کو تعلیم کے زیور سے سکول کی بلڈنگ اور ٹیچر نہ دے کرمحروم رکھا جارہا ہے ، وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف فوری طور علاقہ میں پائی جانے والی محرومی کا ازالہ کریں ، سی او ایجوکیشن اتھارٹی عبدالشکور انجم نے بتایا کہ ٹیچر نے پڑھانے سے انکار کر کے غلطی کی اس کا ازالہ کیا جائے گا بلڈنگ کی تعمیر کے لئے زمین فراہم کر دی گئی ہے جس کے فنڈز کی ضرور ت ہے میں نے ذاتی طور پر پہلے بھی ان بچیوں کے مسئلے پر توجہ دی تھی اب پھر پرائمری سکول کی ٹیچر سے کہا ہے کہ جب تک بلڈنگ کا اہتمام نہیں ہوتا ان بچیوں کو پڑھایا جائے ، سی او ایجوکیشن نے مزید بتایا کہ ہم نے علاقہ کی پڑھی لکھی بچیوں کو سکول میں عارضی تعیناتی کے لئے علاقہ مکینوں کو درخواست کر رکھی ہے ، سکول بلڈنگ کے حوالہ سے انہوں نے کہا کہ فوری تعمیر کے لئے وزیر اعلیٰ پنجاب کو لکھیں گے ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...