خیبر پختونخوا اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے محکمہ محنت کا اجلاس

خیبر پختونخوا اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے محکمہ محنت کا اجلاس

پشاور( سٹاف رپورٹر )خیبر پختونخوا اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے محکمہ محنت کا ایک اجلاس رکن صوبائی اسمبلی اور کمیٹی کے چےئرمین سید جعفر شاہ کی سربراہی میں منعقد ہو ا اجلاس میں ورکرز ویلفےئر بورڈ کے ملازمین کی تنخواہوں، ٹیکنیکل یونیورسٹی کے قیام اور چائلڈ لیبرسے متعلق امور کو زیر بحث لایا گیا۔ اجلاس میں کمیٹی کے ممبران اور اراکین صوبائی اسمبلی ارباب جہانداد، عظمیٰ خان ، بخت بیدار خان کے علاوہ سیکرٹری لیبر ڈیپارٹمنٹ اور دیگر متعلقہ حکام نے شرکت کی۔ کمیٹی کو بتایا گیا کہ ورکرز ویلفےئر بورڈ کے ملازمین کی تنخوا ہوں کا مسئلہ حل کیا گیا۔ مجموعی طور پر 2251 ملازمین کو کلےئر قرار دیا گیا اور جیسے ہی فنڈزریلیز ہو نگے مذکورہ ملازمین کو تنخواہیں مل جائیگی۔ کمیٹی نے یہ سفارش پیش کی کہ لیبر ڈیپارٹمنٹ وفاقی حکومت سے چاروں صوبوں اور سمندر پار کام کرنے والے خیبر پختونخوا کے مزدوروں کی تفصیلی معلومات حاصل کرے۔کمیٹی کے چےئر مین سید جعفر شاہ نے وفاقی حکومت کے پاس خیبر پختونخوا کے مزدوروں کی جمع ہونے والی رقوم اور ان کے استعمال سے متعلق معلومات فراہم کرنے کیلئے ہدایت کی ۔ کمیٹی نے آئندہ اجلاس میں ورکرز ویلفےئر بورڈ کے ممبران کو مدعو کرنے کا فیصلہ بھی کیا۔ اسی طرح کمیٹی نے ٹیکنیکل یونیورسٹی کے قیام کی سفارش بھی پیش کی ۔ اسکے علاوہ چائلڈ لیبر کے حوالے سے اراکین کمیٹی کو بتابا گیا کہ 1996 کے سروے کے مطابق خیبر پختونخوا میں چائلڈ لیبر کی تعداد تقریباً 11 لاکھ تھی۔کمیٹی نے 11 اپریل کو ورکرز ویلفےئر بورڈ کے دفتر میں دوبارہ اجلاس بلانے کا فیصلہ کیا۔ جس میں صوبے کے مزدوروں اور ان کے بچوں کی تعلیم کے متعلق مختلف مسائل پر غور کیا جائے گا۔

مزید : کراچی صفحہ اول


loading...