عوام کے حقوق پر ڈاکہ ڈالنے والے 6ہزار جیل چلے گئے تو کوئی بات نہیں:سراج الحق

عوام کے حقوق پر ڈاکہ ڈالنے والے 6ہزار جیل چلے گئے تو کوئی بات نہیں:سراج الحق

واڑی(نمائندہ پاکستان )امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق نے کہا ہے کہ قوم پانامہ لیکس کی شدت سے انتظار کررہی ہیں بیس کروڑ عوام کے حق پرڈاکہ ڈالنے والے چھ ہزار افراد جیل چلے جائیں تو کوئی بات نہیں ہے ،امریکہ اور اس کے حواریوں کی بالادستی کسی صورت برداشت نہیں اقتدار ملا تو ملک کو حقیقی معنوں میں اسلامی سٹیٹ بنائیں گے اور تمام فیصلے قرآن و سنت کے روشنی میں ہوں گے وہ گزشتہ روز دیر بالا میں شمولیتی جلسہ سے خطاب کررہے تھے جس سے صوبائی امیر مشتاق احمد ،ممبر قومی اسمبلی صاحبزادہ طارق اللہ ،ضلعی امیر حنیف اللہ خان و دیگر نے بھی خطاب کیا ،سراج الحق نے کہا کہ ملک پر قابض دو فیصد سرمایہ دارعوام کی خون چوس کر قومی خزانہ کو بیدردی سے لوٹ کر سرمایہ کو بیرون ممالک منتقل کردیا ہے جن سے محاسبہ ہوئے بغیر کرپشن کا خاتمہ نہیں ہوسکتا انہوں نے کہا کہ پانامہ لیکس عالمی سکینڈل ہے جس سے پوری دنیا میں ملک کی امیج خراب ہوئی ہے اور قوم کی نظریں عدالت عالیہ کی فیصلے پر جمی ہوئی ہیں ہمیں امید ہے کہ سپریم کورٹ پاکستان کی عوام کے امنگوں کے مطابق فیصلہ سنائیگی اگر بیس کروڑ پاکستانیوں کے حقوق ہڑپ کرنے والے چھ ہزار کرپٹ مافیاں جیل چلے جائے تو یہ پوری قوم کی فتح ہوگی انہوں نے کہا کہ اسلام کے نام پر بننے والی ملک پر غیروں کا تسلط ،کرپشن ،کمیشن اور لاقانونیت کا بازار گرم ہے جس کے خاتمے کے لئے آخری حد تک جانے کو تیارہیں انہوں نے کہا کہ اب وقت آگیا ہے کہ قوم کرپٹ لیڈر شپ سے چٹھکارہ حاصل کریں اور محب وطن و کرپشن سے پاک قیادت کا انتخاب کرکے پاکستان کو اصلی معنوں میں اسلام کا قلعہ بنایا جاسکے اور ایک ایسے نظام کی بنیاد رکھی جائے جس میں چیف جسٹس کے ہاتھ میں قرآن ہوں اور تمام فیصلے قرآن کے روشنی میں صادر کیا جائے انہوں نے کہا کہ اگر جماعت اسلامی کو اقتدار ملا تو سب سے پہلے کرپشن میں ملوث لوگوں پر ہاتھ ڈال کر لوٹی ہوئی دولت کا حساب لیں گے اور 70سال سے ذائد عمر کے مردو خواتین کے لئے وظیفہ مقرر کرنے کے ساتھ پانچ بیماریوں کا مفت علاج کریں گے ۔

مزید : کراچی صفحہ اول


loading...