ڈونلڈ ٹرمپ کی وارننگ کے بعد امریکا کا شامی ایئر بیس پر میزائلوں سے حملہ ،لڑاکا طیارے اور ایئر بیس تباہ،9 افراد بھی مارے گئے

ڈونلڈ ٹرمپ کی وارننگ کے بعد امریکا کا شامی ایئر بیس پر میزائلوں سے حملہ ...
ڈونلڈ ٹرمپ کی وارننگ کے بعد امریکا کا شامی ایئر بیس پر میزائلوں سے حملہ ،لڑاکا طیارے اور ایئر بیس تباہ،9 افراد بھی مارے گئے

  


واشنگٹن (ڈیلی پاکستان آن لائن )ڈونلڈ ٹرمپ کی وارننگ کے بعد امریکا نے شامی ایئر بیس پر میزائلوں سے حملہ کر دیا جس کے نتیجے میں شامی لڑاکا طیارے اور ایئر بیس تباہ ہو گئی جبکہ شامی حکومت کیجانب سے 9افراد کی موت کی تصدیق بھی کی گئی ہے ۔حملہ شام کی سرکاری فوج کی جانب سے ادلیب پرمبینہ کیمیائی حملے کے بعد کیا گیا۔

امریکی میڈیا کے مطابق امریکا نے رات گئے شامی ایئر بیس پر ٹام ہاکس کروز میزائلوں سے حملہ کر دیا ، بحرہ روم سے امریکی بحری بیٹری سے داغے گئے 60کروز میزائلوں نے شام کے شہر حمس میں الشرق ایئر بیس اور ایندھن کے سٹیشن کو تباہ کر دیا، حملے میں 9 شامی شہری بھی مارے گئے جبکہ ایئر بیس پر کھڑے شامی لڑاکا طیارے بھی ملبے کا ڈھیر بن گئے ۔ دوسری جانب شام نے امریکی فوجی کارروائی کو جارحیت قرار دیتے ہوئے اس کی پرزور مذمت کی ہے۔

عرب میڈیا رکا کہنا ہے کہ امریکا نے شام میں شعیرات ایئر بیس کو نشانہ بنایا جس میں کئی طیارے تباہ ہوئے جب کہ ایئر بیس کے بنیادی ڈھانچہ اور آلات کو بھی نقصان پہنچا۔

پینٹا گون حکام نے امریکی کارروائی کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ روس کو حملے کی پیشگی اطلاع دے دی گئی تھی جب کہ اگلے حکم نامے تک فوجی کارروائی روک دی گئی ہے۔

واضح رہے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے شامی فورسز کی جانب سے اپنے لوگوں پر کیمیائی کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے شام میں کارروائی کا عندیہ دیا تھا۔

مزید : بین الاقوامی


loading...