کوئی ہمارا پانی بند نہیں کر سکتا،میں بنئے کو کہتا ہوں کہ ہم نے دوسرے راستوں کے ذریعےپانی لانے کے لئے پلان تیار کئے ہوئے ہیں:آصف زرداری

کوئی ہمارا پانی بند نہیں کر سکتا،میں بنئے کو کہتا ہوں کہ ہم نے دوسرے راستوں ...
کوئی ہمارا پانی بند نہیں کر سکتا،میں بنئے کو کہتا ہوں کہ ہم نے دوسرے راستوں کے ذریعےپانی لانے کے لئے پلان تیار کئے ہوئے ہیں:آصف زرداری

  


جعفرآباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) آنے والے دنوں میں پانی پر جنگیں ہو سکتی ہیں،کوئی ہمارا پانی بند نہیں کر سکتا،میں بنئے کو کہتا ہوں کہ ہم نے دوسرے راستوں کے ذریعےپانی لانے کے لئے پلان تیار کئے ہوئے ہیں اور  وسطیٰ ایشیاء سے پانی لایا جائے گا۔ساری نہروں کو پکا کیاجائے گا،کچی کینالیں نہیں چلیں گی۔ڈرپ ایری گیشن سے1000گیلن کے بجائے300 گیلن پانی کی ضرورت پڑتی ہے،ہم نئے انداز سے پانی پہنچانا سکھائیں گے۔

سابق صدر آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ سی پیک سے متعلق کچھ لوگوں کو غلط فہمی تھی،حکمرانوں کو سمجھ نہیں آرہی کہ سی پیک پاکستان کا منصوبہ ہے،سی پیک پر بلوچستان سمیت پورے پاکستان کا حق ہے،پہاڑوں پر چڑھنے والوں سے پوچھیں کہ کس کا نقصان ہوا،پہاڑوں پر جانے سے ہمارے اپنے بھائی،بھتیجے اور بھانجے مارے گئے۔

ٹروکالر کی نئی ایپلیکیشن متعارف، گوگل ڈو کیساتھ انضمام کا بھی اعلان

تفصیلات کے مطابق جعفر آباد میں پیپلز پارٹی کے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے سابق صدر کا کہنا تھا کہ کچھ دوستوں کو بھارت گمراہ کررہا ہے،وہ کیوں گمراہ ہورہے ہیں،گمراہ لوگ دیکھیں بھارت میں مسلمانوں کا کیا حال ہے،بلوچ عوام گمراہ لوگوں کے ہاتھوں استعمال نہ ہوں،مقبوضہ کشمیر میں ظلم کی انتہا ہے اور بھارت میں گائے ذبح کرنے پر پابندی لگائی گئی ہے۔

شریک چیئرمین پی پی نے کہا کہ بلوچستان سے اتنا پیارہے جتنا پاکستان سے پیار ہے،مجھے پہچان سندھ سے ملی شمار بلوچوں میں ہوتا ہے،دوستوں سے کہتا ہوں کہ ان کے پیار کے بغیر کچھ بھی نہیں ہوں،بلوچستان کا مستقبل روشن ہے اور ترقی کے بڑے مواقع ہیں،بلوچستان نے بہت ترقی کرنی ہے اور سنہر ی مواقع موجود ہیں،ہم نے مخالفین کو غدار کہنے کا موقع دیاخیر بخش مری بہت بڑی شخصیت تھے اور آج مریوں کی حالت دیکھیں۔

آصف زرداری نے کہا کہ آئندہ پانی پر جنگیں ہونگی اس لئے بھارت ہمیں کہتا ہے کہ پانی بند کردوں گا،میں بنئے سے کہتا ہوں کہ ہم نے دوسرے راستے ڈھونڈے ہیں پانی لانے کیلئے،بلوچستان سونا،چاندی اور معدنی وسائل سے مالا مال ہے،مجھے آپ کی دھرتی کا درد ہے،میں آپ سب سے ہاں خود چل کر آنے کو تیار ہوں،قائداعظم کو خراج عقیدت پیش کرتے ہیں کہ ان کی وجہ سے آج ہمیں پاکستان ملا،بلوچستان میں ساری نہروں کو پکا کیا جائے گا،بلوچستان کو بناؤں گا،غریبوں کو طاقت ور کروں گا،آپ بے شک ہماری پارٹی میں نہ آئیں لیکن ہم ملکر حکومت بنا سکتے ہیں،ہمیں بلوچستان کی عوام کو چھتری تلے بچا بچا کر چلنا ہے،ہماری غفلت اور چھوٹی سوچ کی وجہ سے برے حالات میں پہنچے،بلوچستان کی زمینیں پاکستان کی سب سے زیادہ زرخیز زمینیں ہیں۔

زرداری نے کہا کہ بلوچستان کو اس لئے حقوق نہیں دیئے تھے کہ ایک خاندان امیر ہوجائے،اگر بلوچستان سے زیادتی ہوئی تو ہم پہاڑوں پر جانے کیلئے تیار ہیں،بلوچ عوام اپنے آپ کو غلط لوگوں کیلئے استعمال ہونے سے بچائیں،میں وزیراعظم بنتا تو اٹھارویں ترمیم کیسے ہوتی،آپ اپنے آپ کو کیوں استعمال ہونے دیتے ہیں،میں کہتا ہوں پانی وسطی ایشیاء سے آئے گا اور میں لاؤں گا۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم بنتا تو کیا خیبر پختونخوا کی شناخت ملتی،مارشل لاء کے مائنڈ سیٹ بدلنے میں 20 سال لگے۔

مزید : قومی /اہم خبریں


loading...