’میں اس جنگل میں جہاز لینڈ کرکے وہاں جسم فروش خواتین کو اتارتا تھا اور سونا لے کر واپس آجاتا تھا‘ 11 طیارہ حادثات میں زندہ بچ جانے والے پائلٹ نے ایسا حیران کن انکشاف کردیا کہ پوری دنیا دنگ رہ گئی

’میں اس جنگل میں جہاز لینڈ کرکے وہاں جسم فروش خواتین کو اتارتا تھا اور سونا ...
’میں اس جنگل میں جہاز لینڈ کرکے وہاں جسم فروش خواتین کو اتارتا تھا اور سونا لے کر واپس آجاتا تھا‘ 11 طیارہ حادثات میں زندہ بچ جانے والے پائلٹ نے ایسا حیران کن انکشاف کردیا کہ پوری دنیا دنگ رہ گئی

  


برازیلیا(مانیٹرنگ ڈیسک) فضائی حادثے میں زندہ بچ جانا کسی معجزے سے کم نہیں ہوتا لیکن برازیل کے ایک پائلٹ نے اپنے 40سالہ کیریئر کے اختتام پر ایسا انکشاف کر دیا ہے کہ پوری دنیا دنگ رہ گئی۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق کلنگر بورگس ڈو ویل نامی اس پائلٹ کا کہنا تھا کہ ”میں اپنے تمام کیریئر میں جسم فروش خواتین کو ایمازون کے جنگلات میں لیجا کر اتارتا اور وہاں سے سونا لے کر واپس آتا رہا ہوں۔ اس عرصے میں میرا جہاز 11بار حادثے کا شکار ہوا مگر میں ہر بار محفوظ رہا۔ میں خود کو دنیا کو خوش قسمت ترین پائلٹ سمجھتا ہوں۔“

’میں اپنی بہن کے ساتھ جہاز پر سفر کررہی تھی، دوران پرواز سوگئی، پھر آنکھ کھلی تو دیکھا ایک مسافر ہمارے سر پر کھڑا۔۔۔‘ خاتون مسافر کے ساتھ دوران پرواز ایسا شرمناک ترین کام ہوگیا کہ جان کر کوئی لڑکی کبھی جہاز میں سُو ہی نہ سکے

رپورٹ کے مطابق بورگس 40سال تک ایمازون کے جنگلات میں موجود سونے کی بلیک مارکیٹ کے ساتھ منسلک رہا اور وہاں جسم فروش خواتین کو پہنچانا اور سونا لے کر واپس آنا اس کی ڈیوٹی تھی۔اس مارکیٹ میں لوگ کانوں سے غیرقانونی طور پر نکالا گیا سونا فروخت کیا کرتے تھے۔ اس کا کہنا تھا کہ ”ایک بار میرے جہاز میں آگ لگ گئی اور وہ گر کر تباہ ہو گیا۔ اس حادثے میں 2مسافر اور میرے تین بھائی جاں بحق ہو گئے۔ میں واحد شخص تھا جو اس حادثے میں بھی محفوظ رہا۔میرے ساتھ اور بھی ہزاروں پائلٹ چھوٹے جہازوں پر یہ کام کرتے تھے۔ ان میں سے جس کسی کے جہاز کے ساتھ ایک بھی حادثہ پیش آیا وہ زندہ نہیں رہا۔ ان مرنے والوں میں میرے کئی دوست پائلٹ بھی شامل تھے۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...