ساحل پر سیر کرتے آدمی کو خالی بوتل میں بند خط مل گیا، 20 سال قبل 10 سالہ بچی کی جانب سے لکھا جانے والا یہ خط پڑھتے ہی شدت سے اس لڑکی کی تلاش شروع کردی کیونکہ۔۔۔ اندر ایسا کیا لکھا تھا؟ جان کر آپ بھی حیران پریشان رہ جائیں گے

ساحل پر سیر کرتے آدمی کو خالی بوتل میں بند خط مل گیا، 20 سال قبل 10 سالہ بچی کی ...
ساحل پر سیر کرتے آدمی کو خالی بوتل میں بند خط مل گیا، 20 سال قبل 10 سالہ بچی کی جانب سے لکھا جانے والا یہ خط پڑھتے ہی شدت سے اس لڑکی کی تلاش شروع کردی کیونکہ۔۔۔ اندر ایسا کیا لکھا تھا؟ جان کر آپ بھی حیران پریشان رہ جائیں گے

  


ایمسٹرڈیم (نیوز ڈیسک) نیدر لینڈز میں ایک جزیرے کے ساحل پر ایک شخص کو بوتل میں بند ایک خط ملنے کے بعد اب اس نامعلوم لڑکی کی تلاش بڑے پیمانے پر شروع ہوگئی ہے جس نے 20 سال قبل 10 سال کی عمر میں یہ خط لکھ کر سمندر میں ڈالا تھا۔

دی مرر کی رپورٹ کے مطابق خط کی تحریر سے پتہ چلتا ہے کہ اسے 10 سالہ سوزی ہیمپٹن نے 1997 میں لکھ کر بوتل میں ڈالا اور برطانیہ کے ساحل پر سمندر میں چھوڑ دیا۔ حیرت کی بات ہے کہ یہ خط گزشتہ 20 سال کے دوران بوتل کے اندر سلامت رہا اور 216 میل کا فاصلہ طے کرکے نیدرلینڈز کے جزیرے ولائی لینڈ کے ساحل پر پہنچ گیا۔

ماں اپنی دو سالہ بیٹی کی تصویر بنانے لگی تو پاس ہی ایک ایسی خوفناک چیز نظر آگئی کہ اس کے ہوش گم ہوگئے

یہ بوتل پیٹر شاپر نامی شخص کو ملی جس نے سوزی کی تلاش شروع کردی ہے، جس کی عمر اب 30 سال ہونی چاہیے۔ پیٹر کا کہنا ہے کہ جب اسے بوتل کے اندر کاغذ کا ٹکڑا نظر آیا تو وہ بہت متجسس ہوئے ۔ انہوں نے بوتل کھول کر کاغذ کا ٹکڑا نکالا تو یہ ایک ننھی بچی کی جانب سے لکھا گیا پیغام تھا جو اس نے 20 سال قبل اس وقت لکھ کر سمندر میں ڈالا جب وہ برطانیہ کے شہر منسٹر میں رہتی تھی۔

سفید کاغذ کے ٹکڑے پر نیلی روشنائی سے لکھا تھا ”جو بھی یہ بوتل اٹھائے اس کے نام۔ ہیلو، میرا نام سوزی ہیمپٹن ہے۔ میں 10 سال کی ہوں۔ میں یہ بوتل 25/08/97 کو سمندر میں ڈال رہی ہوں۔ کیا آپ مجھے بتاسکتے ہیں کہ آپ کو یہ بوتل کب اور کہاںملی؟ میرا پتہ: 49کنگز روڈ، منسٹر آن سی، شیپی، کینٹ، ME12 THL “

پیٹر کا کہنا ہے کہ جب انہیں یہ بوتل ملی تو وہ اپنے جزیرے کے ساحل کی صفائی میں مصروف تھے۔ ان کے ساتھ درجنوں دیگر افراد اور غیر ملکی سیاح بھی اس کام میں مصروف تھے۔ جب انہوں نے سوزی کے خط کے متعلق وہاں موجود لوگوں کو بتایا تو وہ سب لوگ بہت پرجوش ہوئے۔ ساحل کی صفائی کے لئے آنے والی مقامی خاتون بروئن کومرجی کا کہنا تھا کہ ”سوزی مل جائے تو کتنا مزہ آئے گا۔اب وہ 30 سال کی ہوگی۔ مجھے امید ہے کہ اسے اب بھی یاد ہوگا کہ اس نے یہ پیغام لکھ کر بوتل میں ڈالا تھا اور اسے سمندر میں چھوڑ دیا تھا۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...