اگر آپ پلاسٹک کی بوتل میں پانی اور کولڈ ڈرنک پیتے ہیں تو فوری طور پر اس عادت کو بدل لیں ورنہ ۔۔۔ سائنسدانوں نے ایسی بات کہہ دی کہ سن کر آپ ابھی یہ تمام بوتلیں پھینک دیں گے

اگر آپ پلاسٹک کی بوتل میں پانی اور کولڈ ڈرنک پیتے ہیں تو فوری طور پر اس عادت ...
اگر آپ پلاسٹک کی بوتل میں پانی اور کولڈ ڈرنک پیتے ہیں تو فوری طور پر اس عادت کو بدل لیں ورنہ ۔۔۔ سائنسدانوں نے ایسی بات کہہ دی کہ سن کر آپ ابھی یہ تمام بوتلیں پھینک دیں گے

  


لندن(نیوزڈیسک) ہماری روزمرہ زندگی میں پلاسٹک ایک اہم چیز سمجھی جاتی ہے۔شاپنگ بیگ سے لے کر کھانے پینے کی بوتلوں کے لئے اسی کا استعمال کیا جاتا ہے تاہم ماہرین نے خبردار کیا ہے کہ اس کی وجہ سے آپ کینسر جیسے موذی مرض میں مبتلا ہوسکتے ہیں۔ حال ہی میں کی گئی ایک تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ پلاسٹک میں پایاجانے والا کیمیکل بیسفانول ایس( BPS)کی وجہ سے انسانی جینز میں تبدیلی واقع ہوتی ہے اور نتیجہ کے طور پر چھاتی کا کینسر ہوجاتا ہے۔ تحقیق کار ڈاکٹر سومی ڈینڈا کا کہنا ہے کہ بی پی ایس کی وجہ سے ایسٹروجن گلینڈز میں ایسی تبدیلی واقع ہوتی ہے جو کہ جینز BRAC1پر اثرانداز ہونے کے ساتھ سینے کے سرطان کا خطرہ بڑھاتے ہیں۔ نیشنل کینسر انسٹیٹیوٹ کے مطابق ایسی خواتین جنہیں BRCA1جینز وراثت میں ملتا ہے ان میں چھاتی کے سرطان کے امکانات60فیصد زائد ہوتے ہیں۔ سائنسدانوں کاکہنا ہے کہ بی پی ایس کی وجہ سے کینسر کے خلیے تیزی سے پھیلتے ہیں اور ہمیں ایک موذی مرض کی طرف دھکیلتے ہیں۔

بی پی ایس کن اشیاء میں پایا جاتا ہے

یہ کیمیکل ہماری روزمرہ اشیاء میں بہت زیادہ ملتا ہے۔ پلاسٹک کی بوتلیں جن میں ہم پانی اور سافٹ ڈرنکس پیتے ہیں بنائی ہی اس میٹیریل سے جاتی ہیں۔اسی طرح فوڈ کنٹینر ، پلاسٹک بیگ،بسکٹ ، ٹافیاں اور سنیکس وغیرہ کو پیک کرنے میں بھی ان کا بے دریغ استعمال کیا جاتا ہے۔

مزید : تعلیم و صحت


loading...