غزہ میں اسرائیلی فوج کی فلسطینی مظاہرین پر فائرنگ ، درجنوں زخمی

غزہ میں اسرائیلی فوج کی فلسطینی مظاہرین پر فائرنگ ، درجنوں زخمی

غزہ(صباح نیوز)اسرائیلی فوج کی فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی میں فلسطینی مظاہرین پر فائرنگ اور آنسوگیس کی شیلنگ کے نتیجے میں درجنوں فلسطینی زخمی ہوگئے۔مرکز اطلاعات فلسطین کے مطابق فلسطین کے مشرقی غزہ میں فلسطینیوں کی بڑی تعداد نے حق واپسی اور انسداد ناکہ بندی ریلیاں نکالیں، اسرائیلی فوج نے فلسطینی مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے ان کے خلاف آنسوگیس کی شیلنگ کی اور سیدھی گولیاں چلائیں، جس کے نتیجے میں 83 فلسطینی زخمی ہو گئے۔فلسطینی وزارت صحت کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا کہ مشرقی غزہ میں اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے 83 فلسطینی شہری زخمی ہوئے،زخمیوں کو ہسپتال منتقل کیا گیا ، زخمی ہونے والے بعض شہریوں کی حالت خطرے میں بیان کی جاتی ہے۔خیال رہے کہ غزہ کے علاقے میں فلسطینیوں کا عظیم الشان مارچ دوسرے سال میں جاری ہے۔ یہ احتجاج 30 مارچ 2018 کو فلسطین میں یوم الارض کے موقع پر شروع کیا گیا تھا۔ ہر جمعہ کو فلسطینی شہری احتجاج کے لیے غزہ کی مشرقی سرحد پر جمع ہوتے اور صہیونی ریاست کے خلاف نعرے لگاتے ہیں۔ اسرائیلی فوج کی طرف سے فلسطینی مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے طاقت کا مسلسل استعمال کیاجاتا ہے جس کے نتیجے میں اب تک 300 کے قریب فلسطینی شہید اور 31 ہزار زخمی ہوچکے ہیں۔

B

مزید : علاقائی


loading...