بنیادی صحت کی تعلیم اور صفائی اپنا کر بیماریوں سے بچا سکتا ہے،ڈاکٹر فیصل سلطان

بنیادی صحت کی تعلیم اور صفائی اپنا کر بیماریوں سے بچا سکتا ہے،ڈاکٹر فیصل ...

لاہور(پ ر)دنیا بھر میں ہر سال 7اپریل کوصحت مند زندگی کی ضرورت اور اس حوالے سے آگاہی پھیلانے کے لیے ''صحت کا عالمی دن" منایا جاتا ہے ۔ اس سال یہ دن صحت کی یکساں سہولیات : ہر جگہ ہر کسی کے لیے کے عنوان سے منایا جا رہا ہے ۔ یہ تھیم پاکستان اوردیگر ترقی پذیر ممالک میں صحت کی صورتحال سے بہت مطابقت رکھتا ہے جہاں اپنی صحت کا خیال رکھنا ایک آ دمی کی کی زندگی کی ترجیحات میں بہت بعد میں آتاہے ۔'' ان خیا لات کا اظہار ڈاکٹر فیصل سلطان ، چیف ایگزیکٹو آفیسر شوکت خانم میموریل کینسر ہسپتال اور ریسرچ سنٹرنے ورلڈ ہیلتھ ڈے کے موقع پرمیڈیا کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ بنیادی صحت کی تعلیم اور صفائی اپنا کر بیماریوں سے بچا جا سکتا ہے ۔ انہوں نے کہا وائرل بیماریوں کا علاج دوائی سے زیادہ احتیاط اور بہتر نکاسی آب کے نظام میں پوشیدہ ہے ۔

جو کہ ہمارے ہاں کچھ اتنا زیادہ اچھانہیں ہے۔ اس کے علاوہ بنیادی تعلیم، صحت کی تعلیم، کھانے کا معیاا ورتر سیل کانظام ، مظبوط میونسپلٹی کانظام بھی اجتماعی صحت کی صورتحال بہتر بنانے میں اہم کردار ادا کرتے ہیں دنیا بھر میں اس اپروچ کو one health conceptکے نام سے جاناجاتا ہے جس کا مطلب ہے کہ صرف انسان ہی نہیں بلکہ ان کے آس پاس کاماحول اور اس میں رہنے والے حیوانات بھی صحت مند ہونے چاہییں۔ ڈاکٹر فیصل سلطان نے مزید کہا کہ ، آج انفارمیشن ٹیکنالوجی کے دور میں درست معلومات کی ضرورت پہلے سے بھی زیادہ بڑھ گئی ہے ۔ڈاکٹرفیصل نے کہا کہ، ہمیں چاہیے کہ ہم اپنی خوارک کا انتخاب سوچ سمجھ کر کریں۔ ہمیشہ سبزیوں اور پھلوں پر مشتمل متوازن غذا کا انتخاب اچھی صحت کے لیے ضروری ہے۔ اسی طرح ورزش کو معمول کو حصہ بناکر موٹاپے سے بچا جا سکتا ہے جو کہ بہت سے صحت کے مسائل کا باعث بنتا ہے ۔ تمباکو نوشی بہت سی بیماریوں کی جڑ ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...