توقع ہے پاکستان افغان امن عمل میں مثبت کردار جاری رکھے گا ،امریکہ

توقع ہے پاکستان افغان امن عمل میں مثبت کردار جاری رکھے گا ،امریکہ

اسلام آباد(آئی این پی ) امریکہ نے اپنے نمائندہ خصوصی زلمے خلیل زاد کے دورہ پاکستان کے حوالے سے جاری کردہ اعلامیہ میں اس توقع کا اظہار کیا ہے کہ پاکستان افغان امن عمل میں مثبت کردار جاری رکھے گاکیونکہ افغانستان میں امن پاکستان کے مفاد میں ہے۔ ہفتہ کو امر یکی سفارتخانے کی جانب سے جاری کردہ اعلامیہ کے مطابق زلمے خلیل زاد نے5اور 6اپریل کو پاکستان کا دورہ کیاسول و عسکری قیادت وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی، سیکریٹری خارجہ تہمینہ جنجوعہ اور آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے ملاقاتیں کیں،جن میں زلمے خلیل زادنے کہا فر و غ امن کیلئے پاکستان کی کوششیں قابل قدر ہیں، ملاقاتوں میں علاقائی سکیو ر ٹی اور افغان مفاہمتی عمل ، ہونیوالی پیش رفت سمیت باہمی دلچسپی کے اہم دو طرفہ امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔خلیل زاد نے وزیر خارجہ کو دوحہ مذاکرات میں ہونیوالی پیش رفت اور افغان امن عمل کے سلسلے میں اپنی حالیہ مصروفیات کی تفصیلات سے آگاہ کیا اور افغانستان میں اپنی اہم ملاقاتوں کا احوال گوش گزار کیاجبکہ پاکستان کی سول و عسکری قیادت نے افغان مذاکرات کے حوالے سے پیش رفت کو سراہتے ہوئے کہا افغانیوں کے مابین مذاکرات کا انعقاد افغان مفاہمتی عمل کا اہم جزو ہے۔

امریکہ

واشنگٹن (این این آئی)امریکہ کے نمائندہ خصوصی برائے افغان امن عمل زلمے خلیل زاد نے کہاہے پاکستان افغانستان کے معاملے پر اپنی پوزیشن واضح کرے،افغانستان، طالبان اورامریکہ کے درمیان ممکنہ امن معاہدے کے علاوہ پاک افغان حکومتیں بھی ایک معاہدہ کریں گی جس کے ذریعے پاکستان افغانستان میں مزید تخلیقی کرداراداکرسکے گا،غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق زلمے خلیل زادکاایک بیان میں مزیدکہنا تھا امریکہ اورپاکستان کے درمیان تعلقات میں وسعت اسوقت تک نہیں آسکتی جب تک پاکستان افغانستان کے تعلق سے اپنی پا لیسیوں پر نظر ثانی نہیں کرتا، ہم چاہتے ہیں افغانستان اورپاکستان کے درمیان ایک سمجھوتہ ہو جس سے امن قائم ہوسکے،پاکستان سے او ر زیادہ مثبت کردارکی اپیل کرتے ہوئے انہوں نے کہاپاکستان امریکہ سے اچھے تعلقات چاہتا ہے تو اسے افغانستان میں اپنی پالیسی تبدیل کرنا ہوگی،ورنہ تعلقات میں بہتری کا امکان نہیں۔

مزید : صفحہ آخر


loading...