امریکہ میں خواتین اور 6 لے پالک بچوں کی موت کا معمہ حل

امریکہ میں خواتین اور 6 لے پالک بچوں کی موت کا معمہ حل

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک )امریکی تحقیقاتی ٹیم نے خواتین اور 6 بچوں کی موت کا معمہ حل کرتے ہوئے انکشاف کیا کہ ہم جنس پرست خوا تین نے خودکشی کی نیت سے اپنے ہمراہ 6 لے پالک بچوں کی جان لی۔سی این این میں شائع رپورٹ کے مطابق گزشتہ برس اکتوبر میں کیلیفو رنیا کی کاؤنٹی مینڈوچینو میں ’کار حادثے میں دو خواتین سمیت 6 بچے ہلاک ہوگئے تھے تاہم ابتدائی طور پر مذکورہ واقعے کو محض کار حا د ثہ قرار دیا گیا۔بعدازاں تفتیش کاروں نے واقعے سے جوڑے شواہد کا جائزہ لیا تو معلوم ہوا دونوں خواتین نے ارادی طور پر اپنی زندگی کا خا تمہ کرنے کیساتھ 6 بچوں کی زندگی کا چراغ گل کیا۔تحقیقاتی ٹیم نے حقائق پیش کیے کہ دونوں خواتین (ہم جنس پرست شادی) کی بنیاد پر رشتہ ازواج سے منسلک تھیں اور انہوں نے 6 بچوں مارکیس (19 سالہ)، جرمینا اور ابیگلی (14 سالہ)، ڈیوانٹی (15 سالہ)، حننا (16 سالہ) اور سیرا (12) کی کفالت کی ذمہ داری اٹھائی تھی۔تفتیشی افسران نے بتایاخواتین لیپالک بچوں پرتشدد کرتی اور انہیں بھوکا رکھتی تھیں ۔واقعہ سے متعلق کاؤنٹی کے شیرف شننون بارنی نے بتایا شواہد کی روشنی میں کہا جا سکتا ہے سارہ اور جینفر سخت ذہنی دباؤ میں مبتلا تھیں اور اپنی اور بچوں کی جان لینے سے قبل طویل سفر کے دوران غیرمعمولی شراب نوشی کی تھی۔دونوں خواتین نے شراب پی کر اپنی اور بچوں کی جانیں ختم کرنے کا حوصلہ پیدا کیا۔ایک تفتیشی افسر نے کہا متاثرین کے پڑسیوں کے موقف سننے کے بعد ایسا لگتا ہے دونوں خواتین سمجھتی تھیں اگر انہوں نے بچوں کو چھوڑدیا تو کوئی بھی انہیں پالنے کی ذمہ داری قبول نہیں کرے گا۔دو برس قبل دونوں خواتین کیخلاف بچوں پر تشدد کی شکا یت درج ہوئی تھی تاہم متعلقہ ریاستی ادارے نے یہ کہہ کر شکایت خارج کردی تھی کہ بچے کو گرنے کی وجہ سے چوٹ لگی۔

مزید : صفحہ آخر


loading...