صرف عدالت کے سامنے سرنڈر ہو گا،حکومت کی انتقامی غنڈہ گردی کا مقابلہ کریں گے :مسلم لیگ (ن)

صرف عدالت کے سامنے سرنڈر ہو گا،حکومت کی انتقامی غنڈہ گردی کا مقابلہ کریں گے ...

نارووال،اسلام آباد،لاہور(نمائندہ خصوصی ،این این آئی)مسلم لیگ (ن) کے رہنماؤں نے کہا ہے کہ غیر قانونی اقدامات اور انتقامی کاروائیوں کا مقابلہ کرنیوالا ہی لیڈر کہلاتا ہے ، حکومت کی انتقامی غنڈہ گردی کا ڈٹ کر مقابلہ کریں گے اور اس کے آگے نہیں جھکیں گے ، کیا نیب نے لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے کے خلاف کوئی اپیل کی ہے ، حمزہ شہباز نے اپنی درخواست دائر کر دی ہے اور صرف عدالت کے سامنے سرنڈر کریں گے ۔ مسلم لیگ (ن) کی مرکزی ترجمان مریم اورنگزیب نے کہا کہ عمران خان اپنی نالائقی چھپانے کیلئے نیب کو ریاستی دہشتگردی کے لیے استعمال کررہے ہیں،لاہور ہائیکورٹ کے حکم کی روشنی میں نیب حمزہ شہباز کو گرفتار نہیں کرسکتی، نیب لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے پر سپریم کورٹ گئی ہے لیکن عدالتِ عظمی نے اس پر کوئی فیصلہ نہیں دیا، سپریم کورٹ کے ایک فیصلے کو اپنی منشا ء کے مطابق استعمال نہیں کیا جاسکتا۔انہوں نے وزیراعظم پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ عمران خان نے سرعام کہا کہ وہ ساری اپوزیشن کو جیلوں میں ڈالنے آئے ہیں، ان کی کارکردگی آج سب کے سامنے ہے، جان بوجھ کر اپنی نالائقی سے نظر ہٹانے کے لیے یہ سب کیا جارہا ہے، ملک میں کوئی قانون نہیں ، سب کو جیلوں میں ڈالنے کے لیے ریاستی دہشتگردی کی جارہی ہے۔انہوں نے کہا کہ نیب اگر آزاد ہوتی تو اس کی ترجمانی وزیراعظم عمران خان، فواد چوہدری اور شہباز گل نہ کررہے ہوتے۔مرکزی رہنما احسن اقبال نے کہا کہ عمران خان کا ایجنڈاترقی نہیں بلکہ انتقامی کارروائی ہے ۔ نیب کے افسر نے حمزہ شہباز کی رہائشگاہ کے باہر جو گفتگو کی ہے اس کے بعد کوئی شک و شبہ باقی نہیں رہ جاتا۔ اداروں کی جانب سے چھٹی کے روز اسی لئے کارروائی کی جاتی ہے تاکہ عدالتوں سے بچا جا سکے ۔ انہوں نے کہا کہ لاہور ہائیکورٹ نے خصوصی طور پر فیصلہ جاری کیا جبکہ سپریم کورٹ کی جانب سے جنرل آبزرویشن ہے ۔ کیا نیب نے لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے کے خلاف اپیل دائر کی کیا عدالتی فیصلے کو واپس کرانے کے لئے عدالت سے رجوع کیا گیا ۔رانا ثنااللہ نے نیب کے چھاپے کو حملے کے مترادف قرار دیتے ہوئے کہا کہ نیب کا عمل غیر قانونی ہے اور یہ وزیر اعظم کے حکم پر ہورہا ہے اور تمام صورتحال کی ذمہ دار موجودہ حکومت ہوگی۔

مزید : صفحہ اول


loading...