ویلنشیا ء ٹاؤن سوسائٹی کے الیکشن میں بے ضابطگی ثابت

ویلنشیا ء ٹاؤن سوسائٹی کے الیکشن میں بے ضابطگی ثابت

لاہور(ڈویلپمنٹ سیل)ویلنشیاء ٹاؤن سوسائٹی کے الیکشن میں بے ضابطگی ثابت،انکوائری آفیسر نے دوبارہ الیکشن اور ایڈ منسٹریٹرلگانے کی تجویز دے دی،فاتح گروپ نے انکوائری آفیسر کو جانبدار قرار دے کر فیصلہ یکطرفہ قرار دے دیافیصلہ تسلیم کرنے سے انکار ، ویلنشیاء ہاؤسنگ سوسائٹی لاہور کے 10مارچ کو ہونے والے الیکشن میں بے ضابطگیاں ثابت ہو گئیں ،تفصیلات کے مطابق ویلنشیاء ہاؤسنگ سوسائٹی میں کل 5گروپوں نے حصہ لیا جن میں اتحاد گروپ ویلنشیاء،آزاد ویلنشیاء گروپ،ہیومن رائیٹس گروپ،ہمارا ویلنشیاء گروپ عاصم گروپ اور ہمارا ویلنشیاء خواجہ فرقان گروپ شامل تھے ،الیکشن میں ہمارا ویلنشیاء خواجہ فرقان گروپ کامیاب قرار پایا،الیکشن میں حصہ لینے والے تمام چار گروپس نے الیکشن کے نتائج پر عدم اعتماد کا اظہار کیا اور کوآپریٹو ڈیپارٹمنٹ میں دوبارہ گنتی کی اپیل کر دی ،رجسٹرار کوآپریٹو سوسائٹی نے انکوائری کا حکم دیتے ہوئے چیف ایڈیٹر کو مقرر کیا ،درخواست دہندہ راشد نیازی جب رجسٹرار آفس پہنچا تو کوآپریٹو کا عملہ سیل شدہ لفافوں کو کھول کر ووٹوں کی گنتی سے پہلے خرد برد کر رہے تھے ،درخواست دہندہ نے موقع پر ویڈیو ریکارڈ کی اور انکوائری آفیسر کو پیش کر دی جس کا اظہار انکوائری آفیسر نے اپنی رپورٹ میں بھی کیا ،لہذٰا انکوائری آفیسر نے اپنی حتمی رپورٹ میں واضع طور پر لکھ دیا ہے کہ الیکشن میں بے ضابطگی ہوئی ،ووٹوں کی دوبارہ گنتی سے پہلے کوآپریٹو سوسائٹی عملے نے بیلٹ شیٹس کے لفافے کھول کر خرد برد کرنے کی کوشش کی اس لیے سوسائٹی میں فوراََ ایڈ منسٹریٹر مقرر کیا جائے اور دوبارہ الیکشن کروائے جائیں،الیکشن میں دوسرے نمبر پر آنے والے گروپ اتحاد ویلنشیاء گروپ کے چےئرمین سخاوت ڈوگر ،صدارتی امیدوار محمد اشرف خان،جنرل سیکرٹری کے امیدوار شیخ عامر ،ایڈیشنل جنرل سیکرٹری سوویل گوندل ،فنانس سیکرٹری راشد نیازی،ہمارا ویلنشیاء عاصم گروپ کے صدر خواجہ عاصم اور دیگر گروپس نے رجسٹرار کو آپریٹو کے فیصلے کا خیر مقدم کیا ہے اور فوری نوٹیفیکشن جاری کرنے کا مطالبہ کیا ہے،انکوائری آفیسر کے فیصلے پر جیتنے والے ہمارا ویلنشیاء گروپ فرقان گروپ کے ترجمان نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ ویلنشیاء سوسائٹی کے شکست خوردہ عناصر یہ افواہ پھیلا رہے ہیں کہ دوبارہ الیکشن ہونے جا رہے ہیں یہ بالکل بے بنیاد بات ہے جو کوآپریٹو محکمہ کے کچھ لوگوں سے ساز باز کر کے گھڑی گئی ہے ،ویلنشیاء کے با شعور مبران ایسی ہر سازش کا بھر پور مقابلہ کریں گے،صورت حال یہ ہے کہ حالیہ الیکشن میں پانچ گروپوں نے مینجمنٹ کمیٹی کے لیے اپنے پینل کھڑے کیے،8بوتھ پر ان کے کل40نمائندے سارا دن موجود رہ کرنگرانی کرتے رہے،،ہر ووٹ کو چیک کیا گیااور سب گروپوں کے نمائندوں نے نتائج پر دستخط کیے اور نتائج کے مطابق ہمارا ویلنشیاء خواجہ فرقان گروپ کا پورے15افراد پر مشتمل پینل بھاری اکثریت سے کامیاب ہو گیا،مجموعی طور پر اسے815ووٹ حاصل ہوئے،دوسرے نمبر پر اتحاد گروپ کو 400ووٹ ملے،باقی گروپوں کے ووٹ ان سے بھی کم رہے،آزادانہ اور شفاف انتخاب ہوا،پورا دن امن رہا کسی طرف سے کوئی بے ضابطگی کی رپورٹ درج نہ ہوئی سوائے اتفاق گروپ کے سب نے نتائج کو تسلیم کر لیااور ہمیں مبارک باد دی،14مارچ سے ہمارا ویلنشیاء گروپ کی MCنے چارج سنبھال کر کام شروع کر دیا ہے،کئی دن گزرنے کے بعد دیگر گروپ رجسٹرار کوآپریٹو سے ملے اور دوبارہ گنتی کی درخواست کی،انہوں نے چیف آڈیٹر کو آپریٹوکو انکوائری اور دوبارہ گنتی کے لیے مقرر کیاجس کے لیے30مارچ مقرر کیاس نے جیتنے والے گروپ کا موقف سنے بغیر ہی ملی بھگت سے من پسند رپورٹ سوشل میڈیا پر جاری کر دیاور گنتی والے دن سے پہلے لفافے کھولنے کے اسباب اور ذمہ داروں کا یقین کیے بغیر الیکشن نئے سرے سے کرانے کی سفارش کی ہے جو نا انصافی اور ظلم پر مبنی ہے کیونکہ نتائج کے اعلان تک کی کوئی با قاعدگی سامنے نہیں آئی ہم اس کی پُر زورمذمت کرتے ہیں اور اس کی بر طرفی کا مطالبہ کرتے ہیں۔

ویلنشیاء ٹاؤن

مزید : صفحہ آخر


loading...