مزدور رہنماؤں کی صوبائی وزیر لیبرمرتضی بلوچ سے ملاقات

مزدور رہنماؤں کی صوبائی وزیر لیبرمرتضی بلوچ سے ملاقات

گھوٹکی(خصوصی نامہ نگار)سندھ کے وزیر برائے لیبر مرتضی بلوچ سے میرپور ماتھیلو میں ڈپٹی کمشنر گھوٹکی آفس میں نجی صنعتی اداروں میں کام کرنے والے مزدور رہنماؤ ں نے ملاقات کی،ملاقات میں مزدور یونین کے رہنماؤں نے صنعتی اداروں میں مزدوروں کے ساتھ ھونے والی ذیادتیو ں کے حوالے سے شکایات کے انبار لگا دیئے،مزدورو رہنماں کا کہنا تھا کہ نجی اداروں میں ٹھیکیداری نظام کے تحت مزدوروں کے حقوق پر ڈاکہ ڈالا جارہا ھے اور بیس سال سے کنٹریکٹ پر کام کرنے والے مزدوروں کو مستقل نہیں کیا جارہا. انہوں نے کہا کہ حقوق کے لیے آواز اٹھانے والے مزدوروں کو جبری طور پر نوکری سے نکال دیا جاتا ھے اور ان پر جھوٹے مقدمات درج کروائے جاتے ہیں. بعد ازاں صوبائی وزیر نے میڈیا سے بات کرتے ھوئے کہا کہ انہوں مزدوروں کے حقوق کے حقوق کے تحفظ کے لیے قانون سازی کی گئی ھے جس میں ٹھیکیداری نظام کے خاتمے کو یقینی بنایا گیا ھے. انہوں نے کہا کہ آئین میں ٹھیکیداری نظام کی کوئی حیثیت نہیں ھے اور ٹھیکیداری نظام مسلط کرنے والے نجی اداروں کے خلاف سخت قانونی کاروائی عمل میں لائی جائے گی. وزیر لیبر مرتضی بلوچ کا مزید کہنا تھا کہ پہلی ترجیح مزدور کے بچے کی اعلی تعلیم و تربیت پر توجہ دینا ھے کیونکہ یہی بچے مستقبل کا معمار ہیں. قبل ازیں وزیر لیبر کی جانب سے لیبر کالونی کا دورہ بھی کیا گیا تاہم لیبر کالونی میں سہولیات پر عدم اطمینان کا اظہار کرتے ھوئے تمام سہولیات کی فراہمی کی ہدایات دیں.

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...