اسلامی ریاست کا دعویٰ فلاپ ‘ مدینہ کیطرف جانا انتہائی مشکل ‘ وسیم اختر

اسلامی ریاست کا دعویٰ فلاپ ‘ مدینہ کیطرف جانا انتہائی مشکل ‘ وسیم اختر

بہاولپور (ڈسٹرکٹ رپورٹر)امیر جماعت اسلامی جنوبی پنجاب و سابق پارلیمانی لیڈر پنجاب اسمبلی ڈاکٹر سید وسیم اخترنے کہاہے کہ حکومت نے تیل، گیس اور بجلی کی قیمتیں اتنی بڑھا دی ہیں کہ عوام کے پاس کچھ بچتا ہی نہیں۔ پاکستان کو مدینہ کی طرز پر اسلامی ریاست بنانے کا وعدہ کرنے والوں نے (بقیہ نمبر25صفحہ12پر )

مدینہ کی طرف جانا مشکل بنادیاہے۔ مدینہ کی اسلامی ریاست کا مطلب انسانوں کی مشکلات کم کرنا، پسے ہوئے طبقات کو اٹھانا، انسانوں کو انسانوں کی غلامی سے نجات دلانا تھا مگر حکمران اسلامی ریاست کی طرف قدم بڑھانے کی بجائے الٹی سمت جارہے ہیں وہ جامع مسجد الحق میں اجتماع ارکان سے خطاب کر رہے تھے۔انہوں نے کہاکہ معاشی افلاطونوں نے ملکی معیشت کی کشتی بھنور میں پھنسا دی ہے۔ عوام دعا کریں کہ کشتی ڈوبنے سے بچ جائے۔ حکومت بجٹ آنے سے قبل ہی مہنگائی کا وہ سیلاب لے آئی ہے جو سب کچھ بہا لے جائے گا۔ صورتحال یہی رہی تو شاید بجٹ پیش کرنے کی نوبت ہی نہ آئے۔ حکومت کی عوام دشمن پالیسیوں نے عام آدمی کی زندگی ا جیرن کر دی ہے۔ حکومت آٹھ ماہ میں ٹیکس چوروں کو پکڑ سکی نہ ٹیکس وصولی کا کوئی مناسب نظام بناسکی۔ حکمرانوں نے وعدہ کیا تھاکہ کرپٹ اور بد دیانت لوگوں کو پکڑ کر لوٹی گئی قومی دولت نکلوائیں گے مگر عوام کو کوئی خوشخبری نہیں مل سکی۔ انہوں نے کہاکہ حکومت کے پاس اب ایک ہی راستہ ہے کہ لٹیروں کو پکڑیں اور بیرون ملک منتقل کی گئی قومی دولت کو ملک میں لایا جائے۔ آئی ایم ایف کی کڑی شرائط پر حاصل کیا گیا قرضہ قومی معیشت کو سہارا نہیں دے سکے گا اور حکومت کو سود کی واپسی کے لیے مزید قرضے لینا پڑیں گے۔ اانہوں نے کہاکہ سودی قرضوں نے معیشت کا بیڑا غرق کر دیاہے لیکن حکمران ذلت اور خواری کے باوجود سودی معیشت چھوڑنے اور اسلام کا پاکیزہ معاشی نظام اپنانے کے لیے تیار نہیں ہیں۔اجتماع سے پروفیسر عبدالصمداور پروفیسر جمیل احمد نے بھی خطاب کیا ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...