مدارس کا امتحانی نظام عصری اداروں کیلئے قابل تقلید ہے، مفتی محمدنعیم

مدارس کا امتحانی نظام عصری اداروں کیلئے قابل تقلید ہے، مفتی محمدنعیم

کراچی(اسٹاف رپورٹر)وفاق المدارس العربیہ پاکستان کی مجلس عاملہ کے اہم رکن شیخ الحدیث مفتی محمدنعیم نے کہاکہ وفاق المدارس کاامتحانی نظام عصری اداروں کیلئے قابل تقلید ہے، اسکول کالجز اور عصری اداروں میں نقل کے رجحانات طلبہ کے مستقبل کو تباہ کررہے ہیں،پورے پاکستان میں ایک منٹ میں ایک ساتھ پرچوں کی تقسیم وفاق المدارس کے امتحانات کی امتیازی شان ہے، مدارس کے طلبہ نقل تو کیا اساتذہ کے سامنے سراٹھانے کی بھی جرات نہیں کرتے ۔ ان خیالات کا ظہار جامعہ بنوریہ عالمیہ کے مہتمم وفا ق المدارس مجلس عاملہ کے اہم رکن مفتی محمدنعیم نے گزشتہ روز وفاق المدارس کے امتحانات کے آغاز کے موقع پر گفتگوکرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہاکہ ملک بھر میں اس وقت میٹرک کے طلبہ کے امتحانات ہورہے ہیں جس میں سرعام نقل کی اجازت دیکر نونہالوں کے مستقبل کے ساتھ کھلواڑ کیا جارہاہے ہم سمجھتے ہیں اس کے ذمہ دار ہمارے تعلیمی پالیسی ساز ہیں جو نقل وبوٹی مافیا کو چھوٹ دیکر محکمہ تعلیم میں موجود کالی بھیڑوں کو پیسے بٹورنے کا موقع فراہم کررہے ہیں ،جس کے بھرے اثرات مرتب ہورہے ہیں اور طلبہ میں محبت ولگن دم توڑتی ہوئی دیکھائی دے رہی ہے ہر سال امتحانات کے موقع پر یہی صورتحال رہتی ہے اس کے باجود حکومتیں کسی واضح پالیسی کا اعلان نہیں کرتی اور عصری تعلیمی نظام بدتر سے بدترین ہوتاجارہاہے ۔ انہوں نے کہاکہ آج پورے ملک میں وفاق المدارس کے سالانہ امتحانات شروع ہوچکے ہیں ہم میڈیا ، سیاستدانوں اور دانشوروں کو دعوت دیتے ہیں آئیں وہ دیکھیں کس طرح نقل ورشوت سے پاک امتحانات لیے جاتے ہیں ، جہاں امتحان حال میں نقل تو کیا طلبہ اساتذہ کے سامنے سراٹھانے کی جرات بھی نہیں کرسکتے ہیں، انہوں نے کہاکہ وفاق المدارس عربیہ کے تحت پورے پاکستان میں امتحانات بیک وقت شروع ہوتے ہیں اور پرچوں کی تقسیم بھی بیک وقت ہوتی ہے جس سے نہ پرچہ آوٹ ہونے کا خدشہ ہے اور نہ ہی نقل مافیا کو سرگرم ہونے کا موقع ملتاہے، انہوں نے کہاکہ حکومت کو چاہیے کہ وہ وفاق المدارس کے طریقہ امتحان سے فائدہ اٹھائے اور ایسا نظام امتحان تشکیل دے جس نقل مافیا کا خاتمہ ہوجائے ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...