شاہ محمود قریشی کا ممکنہ بھارتی جارحیت کے حوالے سے بیان کس حکمت عملی کا حصہ ہے؟حبیب اکرم نے وضاحت کردی

شاہ محمود قریشی کا ممکنہ بھارتی جارحیت کے حوالے سے بیان کس حکمت عملی کا حصہ ...
شاہ محمود قریشی کا ممکنہ بھارتی جارحیت کے حوالے سے بیان کس حکمت عملی کا حصہ ہے؟حبیب اکرم نے وضاحت کردی

  


اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) تجزیہ کار حبیب اکرم نے کہاہے کہ شاہ محمود قریشی ممکنہ بھارتی جارحیت کے حوالے سے جو بات کررہے ہیں، وہ اس حکمت عملی کا حصہ ہے کہ جب کوئی دھمکی دیتاہے تو فوری طور پر دنیا کو بتا دیا جائے تاکہ دھمکی دینے والا اپنی دھمکی پر عمل در آمد نہ کرسکے۔

دنیا نیوز کے پروگرام ”اختلافی نوٹ“ میں گفتگو کرتے ہوئے حبیب اکرم نے کہا کہ شاہ محمود قریشی ممکنہ بھارتی جارحیت کے حوالے سے جو بات کررہے ہیں، وہ اس حکمت عملی کا حصہ ہے کہ جب کوئی دھمکی دیتاہے تو فوری طور پر دنیا کو بتا دیا جائے تاکہ دھمکی دینے والا اپنی دھمکی پر عمل در آمد نہ کرسکے، پاکستان کے حوالے سے تمام ملکوں کو پتہ ہوناچاہئے کہ اب کوئی بھی پاکستان میں بیٹھ کر کسی دوسرے ملک کے خلاف کارروائی کا سوچ بھی نہیں سکتا ، حکومت کو اس حوالے سے اقدامات کرناچاہئے ، نیشنل ایکشن پلان پر اپنے لئے کام کرنا چاہئے ۔

انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم کو بھارت کے اندرونی سیاسی معاملے اور مودی پر بات نہیں کرنی چاہئے ، کیا راہول ہمارا بہت دوست ہے ؟ راہول کی دادی نے پاکستان کے ساتھ کیا کیا تھا ؟اس لئے وزیر اعظم کو ہندوستان کی مجموعی صورتحال پر بات کرنی چاہئے ، کسی مخصوص شخصیت پر بیان نہیں دینا چاہئے ۔

مزید : قومی


loading...