جہانگیر ترین کے معاملے پر اب بھی بہت کچھ کہہ سکتا ہوں :شاہ محمود قریشی پرعزم

جہانگیر ترین کے معاملے پر اب بھی بہت کچھ کہہ سکتا ہوں :شاہ محمود قریشی پرعزم
جہانگیر ترین کے معاملے پر اب بھی بہت کچھ کہہ سکتا ہوں :شاہ محمود قریشی پرعزم

  


اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہاہے کہ جہانگیر ترین کے معاملے پر اب بھی بہت کچھ کہہ سکتاہوں لیکن اب کچھ نہیں کہوں گا کیونکہ وزیر اعظم عمران خان نے کہہ دیاہے کہ پارٹی کے اندرونی معاملات میڈیا پر نہ لائے جائیں۔

جیونیو ز کے پروگرام ”نیا پاکستان“ میں گفتگو کرتے ہوئے شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ہماری اطلاعات یہ ہیں کہ پلوامہ کی شکل کا ایک اور واقعہ مقبوضہ کشمیر میں رونما ہوسکتاہے جس کی آڑ میں بھارت پاکستان کے خلاف جارحیت کا ارتکاب کرسکتاہے ، ہمارے پاس اس قسم کی اطلاعات ہیں اور خدشات بھی ہیں، بھارت نے جو بیانیہ پلوامہ کے بعد اپنے عوام کے سامنے رکھا تھا ، اس کی حقانیت واضح ہوگئی ہے کہ نہ وہ کچھ عوام کودکھا سکے اور نہ میڈیا کے سامنے رکھا۔انہوں نے کہا کہ پاکستان نے سکیورٹی کونسل کے مستقل ممبران کو اپنے خدشات سے آگاہ کردیاہے اور درخواست کی کہ اس خطے کے امن کیلئے اپنا کردار ادا کریں۔

انہوں نے کہا کہ میں نے مناسب سمجھا کہ میڈیا کہ ذریعے قوم اور عالمی برادری کو آگاہ کروں کہ کیا صورتحال ہے ؟ اگر کوئی ایسی صورتحال واقع ہوتی ہے تو اس کے کیا مضر اثرات ہوسکتے ہیں؟انہوںنے کہا کہ مجھے نفیسہ شاہ کی بات پر افسوس ہوا ، وہ سیاست ضرور کریں لیکن یہ معاملہ پاکستان کا ہے اور یہ پیپلزپارٹی اور تحریک انصاف کے معاملات سے اوپر ہے ، ملکی معاملات کچھ اور ہوتے ہیںلیکن حکومتی معاملات کچھ اور ہوتے ہیں ، اس لئے نفیسہ شاہ کو ملکی معاملات کو ملحوظ خاطر رکھنا چاہئے ۔ انہوںنے کہا کہ بھارت میں انتخابی ماحول کے باوجود مودی کی آل پارٹیز کانفرنس میں اپوزیشن نے حصہ لیاتھا ، اس لئے میں کہتا ہوں کہ اس وقت سیاست کرنے کی بجائے پاکستان کے معاملات کوسامنے رکھا جائے ،جہانگیر ترین کے حوالے سے سوال پر ان کا کہنا تھا کہ میں نے جو کہنا تھا کہہ دیا ہے ، اب بھی اس پر بہت کچھ کہہ سکتاہوں لیکن اب کچھ نہیں کہوں گا کیونکہ وزیر اعظم عمران خان نے کہہ دیاہے کہ پارٹی کے اندرونی معاملات میڈیا پر نہ لائے جائیں۔

مزید : قومی


loading...