کرونا،بیروزگار امپائرز، سکوررز و گراونڈ سٹاف کے حق میں آوازیں بلند

کرونا،بیروزگار امپائرز، سکوررز و گراونڈ سٹاف کے حق میں آوازیں بلند

  

لاہور(سپورٹس رپورٹر)کرونا وائرس کی وجہ سے سے بیروزگار امپائرز، سکوررز و گراونڈ سٹاف کے حق میں آوازیں بلند ہونے لگی ہیں خضرٰی کرکٹ کلب کے صدر عابد حسین نے پی سی بی سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ امپائرز، سکوررز جن کا گزر بسر لوکل ٹورنامنٹس کے میچز پر ہوتا تھا وہ بے کرونا وائرس کی وباء کی وجہ سے تقریبا پچھلے ایک ماہ سے بے روزگار ہوچکے ہیں کیونکہ شہر میں دفعہ 144نافذ ہونے کی وجہ سے کرکٹ کے لوکل مقابلے بھی بند ہوگئے ہیں جن سے ان میچ آفیشلز کے گھروں کے چولہے ٹھنڈے ہوگئے ہیں جبکہ پی سی بی کے سالانہ کرکٹ میچز کی تعداد نئے سٹرکچر کے تحت پہلے ہی محدود ہو گئی ہے جس سے پی سی بی کے کوالیفائیڈ میچ آفیشلز کو میچز بہت کم ملتے ہیں اب جبکہ پی سی بی کی بھی کسی طرح کی کرکٹ نہیں ہو رہی اور نہ ہی شہر میں لوکل کرکٹ میچز کھیلے جارہے ہیں تو ایسے میں پی سی بی کو ان بے روزگار ہونے والے میچ آفیشلز کی مالی معاونت کے لیے سنجیدہ کردار ادا کرنے کی ضرورت ہے تاکہ ان بے روزگار میچ آفیشلز کی کی داد رسی ہو سکے اس کے ساتھ ساتھ وہ گراونڈ سٹاف جو پورے پاکستان میں سابقہ ریجنز میں تعینات تھے ان کی بھی مالی امداد کرنی چاہیے جس سے وہ لوگ بھی اس آفت کی گھڑی میں اپنے خاندان کی کفالت کے قابل ہوسکیں اس ضمن میں کم از کم پی سی بی کو چاہیے کہ حال ہی میں ملتوی ہونے والے قومی ون ڈے ٹورنامنٹ کا بجٹ ان غریب میچ آفیشلز اور گراونڈ سٹاف کے لیے مختص کر دینا چاہیے

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -