لاہور ہائی کورٹ کا ضلعی عدالتوں کو اہم مقدمات کی سماعت جاری رکھنے کا حکم

لاہور ہائی کورٹ کا ضلعی عدالتوں کو اہم مقدمات کی سماعت جاری رکھنے کا حکم

  

ملتان (کورٹ رپورٹر) کورونا وائرس کے خدشہ کے پیش نظر صوبہ بھر میں لاک ڈاؤن میں توسیع ہوئی ہے جس کی وجہ سے لاہور ہائیکورٹ نے بھی ضلعی عدالتوں میں ججز کو اہم مقدمات کی سماعت ہی جاری رکھنے کا حکم دیا ہے۔ ضلعی عدلیہ میں تعطیلات 11 اپریل تک جاری رہیں گی۔ اس ضمن میں گزشتہ روز سیشن جج ملتان کی جانب سے جاری نوٹیفیکیشن کے مطابق (بقیہ نمبر35صفحہ6پر)

سپیشل جوڈیشل مجسٹریٹ محسن نثار 9 اپریل تک،معسود احمد 11 اپریل تک مقدمات کی سماعت کریں گے۔آج اور سول جج عامر منظور، جوڈیشل مجسٹریٹس مسرور عاشق،مسعود احمد اور خاور علی شاہ،9 اور 11 اپریل کو سول جج جمشید انور شاہ، جوڈیشل مجسٹریٹس حافظ محمد زبیر، شہزاد باسط، اور شکیل احمد ضمانت بعد از گرفتاری اور جسمانی ریمانڈ پر سماعت سے متعلق کیسز کی سماعت کریں گے۔ جبکہ آج اور کل ایڈیشنل سیشن ججز خضر حیات اور چوہدری آصف، 9 اور 11 اپریل کو ذولفقار احمد نعیم اور سجاد حسین خان ہراسمنٹ، اندراج مقدمہ، عبوری اور بعد از گرفتاری ضمانت اور حبس بے جا سے متعلق درخواستوں پر سماعت کریں گے۔ جبکہ کورونا وائرس کے خدشہ کے پیش نظر لگائے گئے لاک ڈوان میں توسیع ہونے پر عدالتوں میں بھی کام کی نوعیت تبدیل رہے گی۔ لاک ڈاؤن کے دوران عدالتوں میں صرف اہم نوعیت کے کیسز کی سماعت کے لیے ڈیوٹی ججز چھٹیوں کی طرز پر ہی کیسز کی سماعت جاری رکھیں گے۔جس میں درخواست ضمانت، ہراسمنٹ کی درخواست، اندراج مقدمات سمیت صرف ضروری نوعیت کے کیسز کی سماعت ہی ہوگی۔سول ججز اور مجسٹریٹس ضمانت، ریمانڈ سے متعلق کیسز کی سماعت کریں گے۔ سائلین کو ارجنٹ نوعیت کے کیسز کے بعد فوری فارغ کیا جائے گا۔ عدالت عالیہ میں غیر متعلقہ وکلاء اور سائلین پر پابندی کا فیصلہ برقرار ریے گا۔پنجاب بھر میں خدمات سرانجام دینے والی خواتین ججز و عدالتی عملہ حاضری سے مستثنیٰ ہی رہیں گی۔کوئی بھی کیس عدم پیروی کی بنیاد پر خارج نہیں ہوگا۔ پنجاب بھر کی عدالتوں میں کوئی غیر متعلقہ شخص داخل نہیں ہوگا۔سائل بھی صرف شدید ضروری حالت میں داخل ہوسکے گا۔عدالتوں کو روزانہ کیسز کی سماعت صبح 10 بجے تک مکمل کرنے کی ہدایات دی گئی ہیں۔ علاوہ ازیں کورونا وائرس کے پھیلاؤ کی روک تھام کے لیے جاری اقدامات کے پیش نظر عدالتوں میں ڈیوٹی سر انجام دینے والے پراسیکیوٹرز کو بھی بڑا ریلیف دے دیا گیا ہے۔پراسیکیوٹر جنرل پنجاب رانا عارف کمال نون نے عدالتی ورک کو جاری رکھنے کے لئے پراسیکیوٹرز کو حکم جاری کیا ہے کہ دیگر اضلاع میں ڈیوٹی سر انجام دینے والے پراسیکوٹرز رہائش کے قریب عدالتوں میں ڈیوٹی سر انجام دے سکتے ہیں۔ ڈسٹرکٹ پبلک پراسیکیوٹر کی اجازت کے بعد سفری مشکلات کے پیش نظر پراسیکیوٹرز کو یہ سہولت دے دی گئی ہے۔

حکم

مزید :

ملتان صفحہ آخر -