میلسی: 21افراد پر کرونا وائرس کا حملہ‘ ایک اور مدرسہ قرنطینہ قرار

  میلسی: 21افراد پر کرونا وائرس کا حملہ‘ ایک اور مدرسہ قرنطینہ قرار

  

میلسی(سپیشل رپورٹر)تحصیل میلسی میں کورونا وائرس کے وار جاری ہیں ضلع بھر میں سب سے زیادہ میلسی سے 21 مریض پازیٹو سامنے آ گئے جبکہ ضلعی انتظامیہ نے ایک اور مدرسے کو قرنطینہ سنٹر قرار دیتے ہوئے 18 مشتبہ افراد کو آئسولیٹ کر دیا۔ تفصیل کیمطابق کورونا وائر س کی جاری تباہ کاریوں کے دوران میلسی میں بھی کورونا وائرس کے مریضوں کی ایک بڑی تعداد سا(بقیہ نمبر38صفحہ6پر)

منے آ گئی اور سرکاری اعداد و شمار کے مطابق اس وقت تک تحصیل میلسی سے 21 کنفرم مریض سامنے آ چکے ہیں جن کے کورونا ٹیسٹ پازیٹو قرار دیئے گئے ہیں اس میں زیادہ تر مریضوں کا تعلق تبلیغی جماعت سے ہے اور میلسی کی ابوبکر کالونی کے رہائشی تبلیغی جماعت کے کارکن نذیر احمد اس کی اہلیہ اور تین بیٹیاں بھی کنفرم مریضوں میں شامل ہیں ان مریضوں کو ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال منتقل کیا گیا ہے جبکہ گذشتہ روز ایک اطلاع پر اسلام آباد کے ایک قرنطینہ سنٹر سے جل دیکر میلسی پہنچنے والے محلہ دورہٹہ کے رہائشی پلمبر کاشف ولد گلزار احمد کو انتظامیہ نے اپنی تحویل میں لے لیا اسی طرح نواحی چک نمبر160WBکے ایک دینی مدرسہ کو بھی قرنطینہ سنٹر قرار دیکر وہاں موجود 18 مشتبہ مریضوں کو آئسولیٹ کر دیاگیا ہے دوسری جانب ضلعی انتظامیہ کی جانب سے قرنطینہ سنٹرز اور سرکاری اداروں کے درمیاں بہتر کوآرڈینیشن کیلئے تحصیل بھر میں 4 کوآرڈینیٹر مقرر کیئے گئے ہیں جس کے مطابق تحصیلدار ملک ظفر اقبال جتیال کو دانش سکول اور مدرسہ مصباح جبکہ تحصیل کونسل کیلئے ایس ای او شیخ ابوبکر، تبلیغی مرکز میلسی کیلئے قانونگو افتخار احمد خان جبکہ مختلف گھروں میں بنائے گئے قرنطینہ سنٹرز کیلئے ایس ای او ندیم بھٹہ کو کوآرڈینیٹر مقرر کیا گیا ہے جو مریضوں، ضلعی انتظامیہ، پولیس اور دیگر اداروں میں کوآرڈینیشن کے ذمہ دار ہوں گے۔

قرار

مزید :

ملتان صفحہ آخر -