چھوٹے کاروباری طبقہ کیلئے مراعات کا اعلان کیا جائے، پروگر یسو گروپ

        چھوٹے کاروباری طبقہ کیلئے مراعات کا اعلان کیا جائے، پروگر یسو گروپ

  

لاہور(کامرس ڈیسک) لاہور ایوان صنعت و تجارت کے ممبران پر مشتمل پروگریسو گروپ نے تمام صوبائی اور وفاقی حکومتوں سے مطالبہ کیا ہے کے تمام چھوٹے اور درمیانی درجے کی صنعتوں اور کاروبارکی تنظیموں کے نمائندوں کے ساتھ گفتگو کے ذریعے کرونا وائرس کی وجہ سے بندش سے ہونے والے نقصانات کے تخمینہ لگانے کا عمل جلد از جلد شروع کیا جائے۔ گروپ نے اس امر کا مطالبہ بھی کیا کہ ان اداروں کی جلد از جلد مالی معاونت بھی کی جائے تاکہ وہ اپنے کارکنوں کی تنخواہو ں کی ادائیگی کے قابل ہوں سکیں۔ مسلسل لاک ڈاؤن کی وجہ سے نہ صرف پروڈکشن اور سیل بند ہے بلکہ ان اداروں کے کی آمدن بھی نہ ہونے کے برابر ہے جس کی وجہ سے یہ کارکنوں کی تنخواہوں اور اپنے یوٹیلٹی بل بھی ادا کرنے کے قابل نہ ہیں۔پروگریسو گروپ کے ڈپٹی سیکرٹری صدر محمد اعجاز تنویر نے کہا کہ یہ امر خوش آئند ہے کہ حکومت کو صنعت وتجارت کو لاک ڈاؤن کی وجہ سے ہونے والے نقصان کا ادراک ہے اور اس نے معاشی پہیہ رواں دواں رکھنے کے لئے بیل آؤٹ پیکج کا بھی اعلان کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ لیکن یہ بیل آؤٹ پیکج صرف بڑی صنعتوں اور شعبوں تک محدود نہیں رہنا چاہیے بلکہ چھوٹے اور درمیانے درجے کی صنعتوں اور کاروباری اداروں کی مشکلات کا احساس کرتے ہوئے اس طرف بھی توجہ دینی چاہئیے۔

انہوں نے تمام چیمبرز آف کامرس پر بھی زور دیا کہ وہ اپنے طور پر اپنے ممبران کے ساتھ فی الفور مذاکرات شروع کرے اور ان کی مشکلات پر مشتمل یادداشت بنانے کے ساتھ ساتھ ان کے حل کی نشاندہی کرتے ہوئے نہ صرف حکومت کی توجہ اس طرف مبذول کروائے بلکہ ان کے لئے حکومت سے مراعات بھی لے۔

مزید :

کامرس -