وفاقی و صوبائی حکومتیں منتخب بلدیاتی نمائندوں کو نظر اندازکر رہی ہے: میئر کراچی

وفاقی و صوبائی حکومتیں منتخب بلدیاتی نمائندوں کو نظر اندازکر رہی ہے: میئر ...

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر) میئر کراچی وسیم اختر نے کہا ہے کہ وفاقی و صوبائی حکومتیں منتخب بلدیاتی نمائندوں کو نظر انداز کررہی ہے، صوبے میں کے ایم سی اور ڈی ایم سیز کے چیئرمین اور کونسلرز وزیر اعلیٰ کی ٹیم بن سکتے ہیں ڈاکٹرز اور پیرامیڈیکل اسٹاف کی تنخواہوں کے فنڈز حکومت سندھ ہمیں نہیں دے رہی اس لئے ہم تنخواہوں میں حکومت سندھ کے اعلان کردہ پندرہ فیصد اضافہ نہیں کرسکے، اگر ملازمین نے احتجاج کیا تو میں خود اس کی قیادت کروں گا، یہ بات انہوں نے شاہین کمپلیکس سے ٹاور تک لکویڈ اسپرے مہم کا افتتاح کرنے کے بعد میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہی، انہوں نے کہا کہ ہم نہیں چاہتے کہ کورونا وائرس کے باعث حکومت مشکلات میں ہے اور ان مشکلات میں مزید اضافہ ہو لیکن بار بار خطوط لکھنے اور کہنے کے باوجود تنخواہوں کے حوالے سے فنڈز مہیا نہیں کئے جارہے، میئر کراچی نے کہا کہ بلدیہ عظمیٰ کراچی اور ڈی ایم سیز اپنی پنی سطح پر فعال ہیں اور شہریوں کی مشکلات کم کرنے میں اپنا کردار ادا کررہی ہیں، میئر کراچی نے کہا کہ کے ایم سی کے اسپتالوں میں کے ڈاکٹرز اور پیرامیڈیکل اسٹاف اس وقت فرنٹ لائن میں کام کررہے ہیں اور شہریوں کی جانیں بچا نے میں پیش پیش ہیں، اگر انہیں تنخواہ کا مسئلہ در پیش ہوگا تو کس طرح اپنے فرائض تندہی اور سکون سیانجام دیں گے، کورونا وائرس سے پیدا شدہ صورتحال کے پیش نظر شہر کی بڑی بڑی شاہراہوں، فوڈ اسٹریٹ، مصروف ترین سڑکوں،کے علاوہ یوسی کی سطح پر گلیوں اور چھوٹے بازاروں میں اسپرے کیا جارہا ہے، پیر کی رات شاہین کمپلیکس سے ٹاور تک آئی آئی چندریگر روڈ کے دونوں طرف فٹ پاتھوں پر اسپرے کیاگیا ہے جبکہ منگل کی صبح شاہراہ پاکستان پر سہراب گوٹھ سے واٹر پمپ تک دونوں اطراف لکویڈ اسپرے شروع کیا جائیگا، انہوں نے کہا کہ 40 سوزوکیوں، فائر ٹینڈرز اورواٹر باؤزر کے ذریعہ یہ اسپرے مہم چلائی جارہی ہے، اس مہم کا مقصد کورونا وائرس کے اثرات کو کم کرنا اور شہریوں کو بہتراور صحت مندماحول فراہم کرنا ہے، انہوں نے کہا کہ خدمت خلق فاؤنڈیشن کے زیراہتمام ہم نے مختلف علاقوں میں راشن دینا شروع کردیا ہے اور راشن دیتے وقت کسی قسم کی تشہیر نہیں کی جارہی اور نہ ہی سیلفیاں بنائی جارہی ہیں، انہوں نے کہا کہ کے کے ایف کو مخیر حضرات کی جانب سے راشن کی صورت میں عطیات وصول ہورہے ہیں جنہیں شہریوں تک پہنچایا جارہا ہے، میئر کراچی نے کہا کہ منتخب بلدیاتی نمائندے ہی شہر کی گلی کوچوں سے واقف ہیں ان پر اعتماد کرتے ہوئے حکومت انہیں اپنے ساتھ ملائے اور ان سے کام لے تو بہتر نتائج سامنے آئیں گے کیونکہ یہ مقامی سطح پر کام کرتے ہیں اور گلی محلوں کا ڈیٹا ان کے پاس موجود ہے، اس لئے ضروری ہے کہ ان مشکل حالات میں سیاست کے بجائے سب کو ساتھ لے کر چلا جائے تاکہ کم وسائل میں بہتر نتائج اخذ کئے جاسکیں۔

مزید :

صفحہ اول -