اسد عمر کو وزارت سے کیوں ہٹا یا گیا ؟پہلی بار جہانگیر ترین نے اپنے شدید مخالف رہنما کو ہٹائے جانے کی حقیقت بتا دی

اسد عمر کو وزارت سے کیوں ہٹا یا گیا ؟پہلی بار جہانگیر ترین نے اپنے شدید مخالف ...
اسد عمر کو وزارت سے کیوں ہٹا یا گیا ؟پہلی بار جہانگیر ترین نے اپنے شدید مخالف رہنما کو ہٹائے جانے کی حقیقت بتا دی

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن )تحریک انصا ف کے رہنما جہا نگیر ترین نے کہا ہے کہ اسد عمرکو وزارت سے وزیراعظم عمران خان نے علیحدہ کیا ،یہ وزیر اعظم کی صوابدید ہے ۔نجی نیوز چینل سما کے پروگرام میں اینکر پرسن نے سوال کیا کہ 2013 میں آپ نے الیکشن ہارنا تھا کیونکہ گراﺅنڈ پر آپ کی موجودگی نہیں تھی ،تو پھر 2014 میں دھرنا لے کر کیوں آگئے تھے ؟اس پر جہانگیر ترین نے کہا ہم نے جو بھی پالیسی اختیار کی ،اس وجہ سے پارٹی میں میری مخالفت بنی کہ یہ سیاسی لوگوں کو کیوں لے کر آرہا ہے ،ہماری نظریاتی پارٹی ہے ،ہمیں نظریے پر لڑنا چاہیے ۔اینکر پرسن نے سوال کیا شاہ محمود قریشی ،شفقت محمود ،اسد عمر آپ کی مخالف لابی ہیں ،پارٹی کے ٹاپ لوگوں میں آپ کے ساتھ کون ہے ؟انہوں نے مسکراتے ہوئے کہا کہ جو میرے دل میں ہوتا ہے بولتا ہوں ،جو پارٹی اور عمران خان کے لیے بہتر ہے وہ بولتا ہوں اورابھی بھی بولتا رہوں گا ۔میں نے وزیر اعظم کو مثال دی کہ ایک ایک موتی چن کر ہار بنانا پڑتا ہے ،جو وزیراعظم کے گلے میں پڑتا ہے کیونکہ یہ حلقوں کی سیاست ہے ،اگر یہاں پر صدارتی نظام ہوتا تو ہم کسی اور طرح سے ڈیل کرتے ،حلقوں کی اس سیاست کی وجہ سے ٹکٹوں کے معاملے پر بھی میری مخالفت تھی ،اللہ کا شکر ہے کہ عمران خان وزیراعظم بن گئے اور پنجاب میں بھی تحریک انصاف کی حکومت بنی کیونکہ سب کہتے تھے کہ وفاقی حکومت جیت جاو گے لیکن پنجاب شریفوں سے نہیں لے سکتے ۔اینکر پرسن نے پوچھا اسد عمر کی وزارت کیوں گئی ؟اس پر انہوں نے کہا خان صاحب بہت عرصے سے دیکھ رہے تھے کہ وہ جو بھی فیصلے کرانا چاہتے تھے،ان پر عمل نہیں ہوتا تھا اس لیے انہوں نے وزارت سے الگ کردیا ،یہ وزیراعظم کی صوابدید ہے ،آج بھی کابینہ میں ردو بدل کیا ہے ۔اینکر پرسن نے سوال کیا کہ اب آپ کا گروپ کھڈے لائن لگ گیا ہے ؟جہانگیر ترین نے جواب دیا اس سے فرق نہیں پڑتا کیونکہ یہ عمران خان کی صوابدید ہے ،وہ جس طرح چاہتے ہیںحکومت کو چلائیں ،میرے دل میں کوئی تلخی نہیں ،میں پہلے بھی ان کے ساتھ تھا اب بھی ان کے ساتھ ہوں ۔میں ایک مخلص آدمی ہوں ،میرے ساتھ کچھ غلط بھی ہو جائے تو میں کبھی غلط نہیں کروں گا ۔

مزید :

قومی -