گھر کا کرایہ ادا نہ کر پانے والی ماڈل ماہانہ کروڑ روپے کمانے لگی مگر کیسے؟

گھر کا کرایہ ادا نہ کر پانے والی ماڈل ماہانہ کروڑ روپے کمانے لگی مگر کیسے؟
گھر کا کرایہ ادا نہ کر پانے والی ماڈل ماہانہ کروڑ روپے کمانے لگی مگر کیسے؟
سورس:   Instagram/mspaigebauer

  

نیویارک(مانٹرنگ ڈیسک) انٹرنیٹ نے لوگوں کو آمدن کمانے کے ایسے ذرائع مہیا کیے ہیں کہ انٹرنیٹ کی ایجاد سے پہلے جن کے متعلق کوئی سوچ بھی نہیں سکتا تھا۔ اب اس امریکی ماڈل ہی کو دیکھ لیں جو ایک وقت میں گھر کا کرایہ تک ادا کرنے سے عاجز تھی اور اب اونلی فینز(OnlyFans)نامی ویب سائٹ سے ماہانہ 1لاکھ ڈالر (تقریباً 1کروڑ 52لاکھ روپے) کما رہی ہے۔ ڈیلی سٹار کے مطابق اس 30سالہ پیج بائر نامی ماڈل کا تعلق امریکی ریاست الباما سے ہے، جس نے کورونا وائرس کی وباءشروع ہونے کے بعد فروری 2020ءمیں اونلی فینز پر اپنا اکاﺅنٹ بنایا اور اس پر اپنی فحش تصاویر اور ویڈیوز فروخت کرنی شروع کیں۔

رپورٹ کے مطابق اونلی فینز پر تصاویر اور ویڈیوز دیکھنے کے خواہش مندوں سے ماہانہ سبسکرپشن فیس وصول کرنے کے علاوہ پیج بائر ان مردوں کو بھی سروس مہیا کرتی ہے جو خواتین کے ہاتھوں ہتک آمیز سلوک کرانے میں جنسی تسکین محسوس کرتے ہیں۔ پیج بائر کا کہنا ہے کہ”مجھ پر ایک وقت ایسا بھی گزرا ہے کہ میرے پاس اپارٹمنٹ کا کرایہ دینے کے پیسے نہیں ہوتے تھے۔ تب مجھے معلوم ہوا کہ کچھ مرد ہتک آمیز سلوک میں جنسی تسکین محسوس کرتے ہیں اوراس کے عوض خواتین کو رقم ادا کرتے ہیں، چنانچہ میں نے یہ کام شروع کر دیا اور اونلی فینز پر بھی اکاﺅنٹ بنا لیا۔ میں نے گزشتہ ایک سال کے دوران صرف اونلی فینز سے 13لاکھ ڈالر (تقریباً 19کروڑ 80لاکھ روپے)کمائے ہیں۔ میں اونلی فینز پر بھی مردوں کی توہین کرتی ہوں اور ایک مرد سے اس کا کے 20ڈالر (تقریباً 3ہزار روپے) لیتی ہوں۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -