پیپلزپارٹی کو عدالت اور صحافت کی آزادی گوارہ نہیں ، عشرت اشرف

پیپلزپارٹی کو عدالت اور صحافت کی آزادی گوارہ نہیں ، عشرت اشرف

لاہور (پ ر) پاکستان مسلم لیگ (ن) کی مرکزی رہنما وممبر قومی اسمبلی بیگم عشرت اشرف نے کہا ہے کہ پیپلزپارٹی کو عدالت اور صحافت کی آزادی گوارہ نہیں ہے اور اس پارٹی کی قیادت نے احتساب کے ڈر سے کئی بار ان دونوں اداروں پر شب خون مارا۔ فوجی آمر پرویز مشرف کے دور آمریت کے مقابلے میں صدر زرداری کے نام نہاد جمہوری دور میں کراچی سمیت پورے پاکستان کے اندر زیادہ صحافی تشدد کا نشانہ بنے اور قتل ہوئے۔ بدعنوان حکمرانوں کو عدلیہ اور میڈیا کی آزادی سوٹ نہیں کرتی۔ مسلم لیگ (ن) کے قائد میاں نواز شریف اور خادم پنجاب میاں شہباز شریف عدلیہ کی طرح میڈیا کو بھی آزاد اور فعال دیکھنا چاہتے ہیں۔ اپنے ایک بیان میں بیگم عشرت اشرف نے مزید کہا کہ این آر او برانڈ حکومت تنقید کے ڈر سے میڈیا کے پیروں میں بیڑیاں پہنانے کے درپے ہے مگر مسلم لیگ (ن) ان کے ناپاک عزائم کو ناکام بنا دے گی۔ بدعنوان حکمران ضابطہ اخلاق کی آڑ میں میڈیا کی آزادی اور شہریوں کا حقائق سے آگہی کا بنیادی حق سلب کرنے کے درپے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ میڈیا کو آزادی کسی نے پلیٹ میں رکھ کر پیش نہیں کی بلکہ یہ کہنا مشق صحافیوں کی جہد مسلسل اور قربانیوں کا نتیجہ ہے۔ مسلم لیگ (ن) کے قائدین اور کارکنان میڈیا کی آزادی کیلئے قربانیاں دینے والے ممتاز صحافیوں کو سلیوٹ اور شہید صحافیوں کی بلندی درجات کیلئے دعا کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کرپشن سمیت معاشرتی برائیوں کو بے نقاب اور سماج دشمن عناصر کا محاسبہ کرنے کیلئے میڈیا کا آزادانہ اور غیر جانبدارانہ کردار انتہائی اہمیت کا حامل ہے۔ مسلم لیگ (ن) کے ہوتے ہوئے بدعنوان حکومت صحافت کی آزادی پر کوئی قدغن نہیں لگا سکتی۔

مزید : میٹروپولیٹن 1