مسئلہ کشمیر اقوام متحدہ کیلئے بھی خطرہ بنا ہوا ہے ‘نے ڈیوڈار

مسئلہ کشمیر اقوام متحدہ کیلئے بھی خطرہ بنا ہوا ہے ‘نے ڈیوڈار

  

لندن (بیورورپورٹ) برطانوی پارلیمنٹ کی جانب سے ریاست جموں و کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالیوں پر بحث کرنے پر رضامندی ظاہر کرنے کا انکشاف کرتے ہوئے ایک رکن پارلیمنٹ نے ڈیوڈار نے کہا ہے کہ مسئلہ کشمیر پاکستان اور بھارت کے لئے ہی نہیں بلکہ اقوام متحدہ کیلئے بھی خطرہ بنا ہوا ہے اور اگر دونوں حکومتوں نے اس مسئلے کو حل کرنے کے لئے جلد از جلد اقدامات نہ اٹھائے تو پوری دنیا کا امن خطرے میں پڑھ سکتا ہے برطانوی ہاﺅس آف کاﺅنٹر کے رکن ڈیوڈارڈ نے اس بات کا انکشاف کیا ہے کہ برطانوی پارلیمنٹ ریاست جموں و کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالیوں پر خصوصی بحث کرنے کی باضابطہ آمادگی ظاہر کر دی ہے اس سلسلے میں جلد ہی باضابطہ طور پر نوٹیفکیشن جاری کیا جائیگا انسانی حقوق کی پامالیوں کو روکنے، کالے قوانین کو ہٹانے، فوج کی تعداد کو کم کرنے، لوگوں کے حقوق بحال کرنے کا مطالبہ کیا جائیگا پارلیمنٹ نے کہا کہ ریاست جموں و کشمیر کے لوگ کئی برسوں سے انسانی حقوق کی پامالیوں کا سامنا کر رہے ہیں پولیس و فورسز کو لامحدود اختیارات دیئے گئے ہیں جس کی وجہ سے انسانی حقوق کی پامالیاں عروج پر پہنچ گئی ہیں اور پچھلے 25 برسوں کے دوران نہ صرف دس ہزار سے زیادہ افراد کے لاپتہ ہونے بلکہ اجتماعی قبروں کا بھی انکشاف ہوا ہے جبکہ آئے دن خواتین، بچوں، نوجوانوں، بزرگوں کے ساتھ ناشائستہ سلوک کرنے کے ساتھ ساتھ انہیں انٹروکیشن سینٹروں، پولیس سٹیشنوں، فورسز کیمپوں میں تشدد کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔

مزید :

عالمی منظر -