لبنان ‘فوج اور عسکریت پسندوں میں 24 گھنٹے کےلئے جنگ بندی پر عمل درآمد شروع

لبنان ‘فوج اور عسکریت پسندوں میں 24 گھنٹے کےلئے جنگ بندی پر عمل درآمد شروع

  

بیروت (این این آئی)لبنان کی سرحد پر فوج اور عسکریت پسندوں میں 24 گھنٹے کےلئے جنگ بندی پر عمل درآمد شروع ہو گیا ۔گزشتہ روز ہونے والی جنگ بندی سرحدی قصبے ارسل پر قبضے کےلئے کئی دن سے جاری لڑائی کے بعد ہوئی ۔واضح رہے کہ لبنان کے اس سرحدی قصبے پر النصر ہ فرنٹ نامی شدت پسند تنظیم نے قبضہ کر لیا تھا، یہ تنظیم القاعدہ اور عراق وشام میں ایک بڑے رقبے پر اپنی حکومت قائم کرنے والی عسکری تنظیم داعش(دالہ الاسلامی عراق و شام) کا حصہ بتائی جاتی ہے،داعش نے جون میں اپنے زیر تسلط علاقے میں خلافت کے قیام کا اعلان کر دیا تھافوج اور عسکریت پسندوں میں ہونے والی جنگ بندی منگل کی شام 7 بجے سے شروع ہو چکی ہے غیر ملکی میڈیا کے مطابق اس لڑائی میں لبنان کے 16 فوجی ہلاک ہو چکے ہیںاور 22 کے قریب فوجی ابھی بھی لاپتہ ہیں۔

دوسری جانب عسکریت پسند تنظیم کے رہنما ابوحسن الحمسی سمیت دیگر کی ہلاکت بھی ہوئی ہے۔لبنان کے ایک سیاسی رہنما نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا ہے کہ فوج دوبارہ سرحدی قصبے کا کنٹرول جلد حاصل کر لے گی۔

مزید :

عالمی منظر -