سابق چیف جسٹس افتخار چودھری کو 24بلین ہرجانے کا نوٹس

سابق چیف جسٹس افتخار چودھری کو 24بلین ہرجانے کا نوٹس

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی ) سابق فوجی صدر پرویز مشرف کے دور میں پنجاب کے وزیر قانون رہنے والے رانا اعجاز احمد نے سابق چیف جسٹس کو 24بلین ہرجانے کا قانونی نوٹس بھجوا دیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ بطور چیف جسٹس ملکی ساکھ کو نقصان پہنچایا، دو مرتبہ پی سی او کا حلف اٹھایا اور پرویز مشرف کو آئین میں ترمیم کی اجازت دی، سٹیل ملز اور ریکوڈک کیس میں ملک کو اربوں روپے کا نقصان پہنچایا،عوام کو آزاد عدلیہ کے خواب دکھائے لیکن حقیقت میں لوگوں کا عدالتوں پر اعتماد کم ہوا،سابق چیف جسٹس نے اثرورسوخ استعمال کرکے اپنے بیٹے ارسلان افتخار کے خلاف کرپشن کے مقدمات التوا میں ڈالے ، سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی کو عہدے سے ہٹایا اور این آر او پرقومی خزانے سے رقم ضائع کی ۔نوٹس میں کہا گیا ہے کہ 14روز میں ہرجانے کی رقم 24بلین ادا کی جائے بصورت دیگر قانونی کارروائی کی جائے گی ۔ رانا اعجاز احمد خان کا کہنا ہے کہ حاصل ہونے والی رقم آئی ڈی پیز کو بھجوائی جائے گی۔

 ہرجانہ ، نوٹس

مزید :

صفحہ آخر -