امریکہ اور جنوبی کوریا کی مشقوں کو اعلان جنگ سمجھا جائے گا، شمالی کوریا

امریکہ اور جنوبی کوریا کی مشقوں کو اعلان جنگ سمجھا جائے گا، شمالی کوریا

  

پیانگ یانگ (نیوز ڈیسک) شمالی کوریا نے اعلان کردیا ہے کہ اگر امریکہ اور جنوبی کوریا عنقریب شروع ہونے والی مشترکہ جوجی مشقوں سے باز نہ آئے تو اسے اعلان جنگ سمجھا جائے گا اور امریکہ شمالی کوریا کے خوفناک میزائلوں سے بچ نہیں پائے گا۔ یہ اعلان شمالی کوریا کی چوسن پیس نیشنل کمیٹی کی طرف سے سامنے آیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ مشقیں فوری کینسل کی جائیں ورنہ امریکہ اور جنوبی کوریا نتائج کیلئے تیار ہوجائیں۔ الچی، فریڈم گارڈین نامی مشقیں دنیا میں کمپیوٹر ٹیکنالوجی کی مدد سے دشمنی کے حملوں کو روکنی کا سب سے بڑا مظاہرہ ہوتی ہیں اور اگست یا ستمبر کے مہینہ میں منعقد ہونے والی ان مشقوں کا بنیادی مقصد جنوبی کوریا کو شمالی کوریا کے حملے کی صورت میں محفوظ رکھنا ہے۔ شمالی کوریا کا کہنا ہے کہ امریکہ اور اس کی کٹھ پتلی جنوبی کوریا آگاہ رہیں کہ ہم ان کے شیطانی کھیل کو معاف نہیں کریں گے اور انہیں اس کی سزا مل کے رہے گی۔ ایک حکومتی نمائندے نے واضح کیا کہ شمالی کوریا کے صبر کا پیمانہ لبریز ہوچکا ہے اور اگر امریکہ نے ہوشمندی سے کام نہ لیا تو ان کے جدید ٹیکنالوجی سے لیس لمبے فاصلے تک مار کرنے والے میزائل نام نہاد سپر پاور کو سبق سکھانے کیلئے تیار ہیں۔

مزید :

صفحہ آخر -