موٹر سائیکل سواروں کیخلاف کریک ڈاﺅن ،ناکوں پر شہریوں کی تذلیل کیخلاف محمود الرشیدکی تحریک التوائ

موٹر سائیکل سواروں کیخلاف کریک ڈاﺅن ،ناکوں پر شہریوں کی تذلیل کیخلاف محمود ...

  

لاہور (نمائندہ خصوصی)اپوزیشن لیڈر پنجاب میاں محمود الرشید نے پنجاب پولیس کی طرف سے صوبہ بھر میں موٹر سائیکل سواروں کے خلاف کریک ڈاﺅن، ناکوں پر بلاجواز تلاشی اور شہریوں کی تذلیل کے خلاف پنجاب اسمبلی میں تحریک التواءکار جمع کروائی ہے اور کہا ہے کہ پنجاب کا کنٹرول عملاً پولیس نے سنبھال لیا ہے،وفاقی دارالحکومت کے بعد پنجاب میں بھی ن لیگ نے سیاسی شکست تسلیم کر لی ہے، حکومت عوام کو فوج ،رینجر اور پولیس سے لڑانے کی سازش کررہی ہے، عدالتیں انسانی حقوق کی بدترین پامالی اور عوام کا عرصہ حیات تنگ کیے جانے کے حوالے سے صوبائی حکومت کے ماورائے آئین و قانون رویے کا نوٹس لے، انہوں نے اسمبلی میں اپنے چیمبر میں اخبار نویسوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ افسوس آزادی کے مہینے میں شہریوں سے آزادانہ نقل و حمل سمیت ان کے بنیادی آئینی حقوق چھیننے جارہے ہیں پنجاب میں سول مارشل لاءمسلط ہے، انہوں نے کہا کہ کیا پنجاب میں بھی آرٹیکل 245 نافذ ہو چکا ہے جو شہریوں سے ان کے بنیادی حقوق سلب کر لیے گئے؟، انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کے کارکنوں کی پکڑ دھکڑ اور انکے گھروں پر چھاپے اور چادر اور چاردیواری کے تقدس کی پامالی کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں اور ڈسٹرکٹ پولیس افسران کو بھی کہتے ہیں کہ وہ حکومت کے غیر قانونی احکامات کو تسلیم کرنے سے انکار کر دیں، انہوں نے مزید کہا کہ گزشتہ پانچ سالوں میں سنگین جرائم میں 110فیصد اضافہ ہو چکا، شہری دن رات ڈاکوﺅں کے ہاتھوں لٹ رہے ہیں مگر پنجاب پولیس کو ان کی اصل ڈیوٹی سے ہٹا کر تحریک انصاف کے نوجوانوں کے پیچھے لگا دیا گیا ،حکمران ہوش کے ناخن لیں اور سیاسی مقاصد کیلئے اداروں کو استعمال نہ کریں، ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ تمام سیاسی جماعتیں بہت جلد اس غیر آئینی حکومت کے خلاف ہمارے ساتھ سڑکوں پر ہوں گی ، حکمرانوں کے غیر آئینی اقتدار کے گنتی دن رہ گئے ہیں۔

مزید :

صفحہ اول -