پٹرول سپلائی بند، 48 گھنٹوں میں پٹرول بحران پیدا ہونے کا خدشہ، پنجاب میں سی این جی اچانک بند

پٹرول سپلائی بند، 48 گھنٹوں میں پٹرول بحران پیدا ہونے کا خدشہ، پنجاب میں سی ...
پٹرول سپلائی بند، 48 گھنٹوں میں پٹرول بحران پیدا ہونے کا خدشہ، پنجاب میں سی این جی اچانک بند

  

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) آزادی مارچ کو روکنے کے لئے وفاقی حکومت نے اسلام آباد، راولپنڈی اور دیگر شہروں کو پٹرول و ڈیزل کی سپلائی روکنے کا فیصلہ کیا ہے۔ باوثوق ذرائع کے مطابق آج سے جڑواں شہروں کو تیل کی سپلائی روک دی گئی ہے اور آئندہ 24 سے 48 گھنٹوں میں پٹرول و ڈیزل کا بحران پیدا ہوسکتا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ بعض حکومتی حلقوں کا خیال ہے کہ پٹرول کی قلت پیدا کرکے آزادی مارچ کو اگر روکا نہیں جاسکتا تو اس کا اثر کم ضرور کیا جاسکتا ہے۔ ایک جانب پٹرول کی سپلائی روک کر لوگوں کو تنگ کیا جارہا ہے تو دوسری جانب فنی خرابی کے نام پر سی این جی کی سپلائی بھی پنجاب میں اچانک بند کردی گئی ہے۔ شیڈول کے مطابق جمعرات کی صبح 6 بجے سے لے کر جمعہ کی صبح 6 بجے تک 24 گھنٹے کے لئے سی این جی کی سپلائی دی جانی تھی لیکن سوئی نادرن گیس نے اچانک گیس فیلڈ میں خرابی کا نام لے کر سی این جی کی سپلائی جمعرات کی شام 6 بجے بند کرنے کا اعلان کردیا ہے۔دوسری جانب پنجاب بھر میں موٹرسائیکل سواروں کی کمبختی آئی ہوئی ہے اور ان کو بہانے سے روک کر ناصرف رنگ کیا جارہا ہے بلکہ ان کی موٹرسائیکلیں بھی مختلف بہانوں سے تنگ کیا جارہا ہے۔ یہ امر قابل ذکر ہے کہ پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے نوجوانوں کو موٹرسائیکل پر اس مارچ میں شرکت کے لئے کہا تھا۔

مزید :

قومی -Headlines -