جھوٹ بولنے کا سوچوں بھی تو لگتا ہے جیسے سانس رک جائےگا: طاہرالقادری

جھوٹ بولنے کا سوچوں بھی تو لگتا ہے جیسے سانس رک جائےگا: طاہرالقادری
جھوٹ بولنے کا سوچوں بھی تو لگتا ہے جیسے سانس رک جائےگا: طاہرالقادری
کیپشن: tahir ul qadri

  

لاہور (ویب ڈیسک) عوامی تحریک کے سربراہ علامہ ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا ہے کہ وہ جھوٹ بولنے کا سوچیں بھی تو ایسا لگتا ہے کہ اندر کا سانس اندر ہی رہ جائے گا۔ چوہدری برادران کی رہائش گاہ پر پریس کانفرنس کے دوران ایک صحافی نے طاہرالقادری سے پوچھا کہ آپ جھوٹ نہیں بولتے، یہ بتائیں کہ عمران خان سے ملاقات ہوئی کہ نہیں۔ تو طاہر القادری نے جواب دیا کہ وہ واقعی جھوٹ نہیں بولتے، لگتا ہے کہ جھوٹ بولوں تو اندر کا سانس اندر ہی رہ جائے گا۔ انہوں نے صحافی کے سوال کا جواب دینے سے بھی گریز کیا اور کہا کہ آپ نے سوال ہی ایسا پوچھ لیا ہے جس کا جواب نہیں دے سکتا۔

مزید :

لاہور -