سعودی عرب کاغیر قانونی ملازمین کے خلاف سخت کارروائی کا آغاز

سعودی عرب کاغیر قانونی ملازمین کے خلاف سخت کارروائی کا آغاز
سعودی عرب کاغیر قانونی ملازمین کے خلاف سخت کارروائی کا آغاز

  

جدہ (مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی عرب نے بیرون ممالک سے آنے والے غیر قانونی ملازمین کے خلاف سخت کارروائی کا آغاز کردیا ہے۔ حکومت نے مملکت میں غیر قانونی طور پر مقیم لوگوں کو دی گئی مہلت ختم ہونے پر کارروائی کا آغاز کیا تھا جس میں اب شدت آگئی ہے۔ میڈیا رپورٹوں کے مطابق پچھلے چھ ماہ کے دوران ایک لاکھ سے زائد غیر قانونی غیر ملکی ملازمین کو ملک بدر کردیا گیا ہے۔ اخبار عرب نیوز کے مطابق وزارت لیبر اور وزارت داخلہ نے اس سلسلہ میں خصوصی میٹنگ منعقد کی ہے جس میں فیصلہ کیا گیا کہ غیر ملکی ملازمین کی دستاویزات کا معائنہ کیا جائے ملازمت اور سڑکوں پر بھی کیا جائے گا۔ میٹنگ میں یہ بات بھی سامنے آئی کہ بہت سے غیر قانونی ملازمین ابھی بھی مملکت میں موجود ہیں۔ میٹنگ کے بعد جاری ہونے والے سرکاری اعلامیے میں سعودی سپانسروں اور آجروں کو خبردار کیا گیا کہ وہ اپنے ملازمین کو دیگر اداروں کیلئے کام کرنے کی اجازت نہ دیں ورنہ لیبر قوانین کی خلاف ورزی کے جرم میں ان کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔ غیر ملکی غیر قانونی ملازمین کو دی گئی مہلت کا اختتام اس سال مارچ میں ہوا تھا۔

مزید :

انسانی حقوق -