حکومت نے آزادی مارچ روکنے کافیصلہ کر لیا، پولیس کی چھٹیاں منسوخ، موبائل فون سروس بند رہنے کا امکان

حکومت نے آزادی مارچ روکنے کافیصلہ کر لیا، پولیس کی چھٹیاں منسوخ، موبائل فون ...
حکومت نے آزادی مارچ روکنے کافیصلہ کر لیا، پولیس کی چھٹیاں منسوخ، موبائل فون سروس بند رہنے کا امکان
کیپشن: container

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) وفاقی حکومت نے تحریک انصاف کے آزادی مارچ کو روکنے کا فیصلہ کر لیا ہے اور مختلف راستے سیل کرنے کیلئے راولپنڈی اسلام آباد میں 900 کنٹینرز پہنچا دیئے گئے گئے، اسلام آباد میں داخلے کیلئے قومی شناختی کارڈ بھی لازمی قرار دے دیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق وفاقی حکومت کی حکمت عملی کے تحت 10 اگست کو اسلام آباد کا ریڈزون سیل کر دیا جائے گا جبکہ راولپنڈی اسلام آباد کو 12 اگست سے سیل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے اور 13 اور 14 اگست کو جڑواں شہروں میں موبائل فون سروس بند رکھنے کا بھی امکان ہے۔ راولپنڈی اور اسلام آباد پولیس کی چھٹیاں منسوخ کر دی گئی ہیں اور مختلف شاہراہوں پر ایلیٹ فورس کے کمانڈوز تعینات کئے جائیں گے، کمانڈوز کو مختلف اوقات میں ناکے لگانے کا حکم بھی دے دیا گیا ہے۔ راولپنڈی اور اسلام آباد میں 900 کنٹینرز پہنچا دیئے گئے ہیںجن کے ذریعے فیض آباد اور ایکسپریس ہائی وے سمیت دیگر مقامات کو سیل کیا جائے گا۔ اسلام آباد میں داخلے کیلئے قومی شناختی کارڈ بھی لازمی قرار دے دیا گیا ہے جبکہ شناخت ظاہر نہ کرنے والوں کو گرفتار کرنے کا حکم دیا گیا ہے۔ وفاقی دارالحکومت میں بغیر نمبر پلیٹ گاڑیوں اور موٹر سائیکلوں کا داخلہ بھی بند کر دیا گیا ہے۔ ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ 13 اور 14 اگست کو ریڈ زون کی سیکیورٹی فوج کے حوالے کر دی جائے گی۔

مزید :

اسلام آباد -اہم خبریں -