عوامی تحریک کا سانحہ ماڈل ٹاؤن کیخلاف ملک گیر مظاہروں کا اعلان

عوامی تحریک کا سانحہ ماڈل ٹاؤن کیخلاف ملک گیر مظاہروں کا اعلان

لاہور(نمائندہ خصوصی) پاکستان عوامی تحریک کی سنٹرل کور کمیٹی کے پہلے اجلاس میں سانحہ ماڈل ٹاؤن کے خلاف ملک گیر احتجاجی مظاہرے کرنے کا فیصلہ کیاگیا ہے۔ کور کمیٹی کے دیگر فیصلوں میں قومی خزانے کی لوٹ مار کے تمام کیسز فوجی عدالت میں بھجوانے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔ کور کمیٹی کے فیصلہ کے مطابق 7 سے 14 اگست تک ہفتہ آزادی منایا جائیگا۔ پاکستان عوامی تحریک کے دستور پر نظر ثانی کیلئے 8 رکنی کمیٹی قائم کر دی گئی۔ اجلاس میں سعودی عرب میں ہونیوالے خودکش دھماکے کی شدید مذمت کی گئی۔ سنٹرل کور کمیٹی کے اجلاس کی صدارت ڈاکٹر حسن محی الدین نے کی۔ اجلاس میں سانحہ ماڈل ٹاؤن کے خلاف ملک گیر احتجاجی مظاہرے کرنے کا اعلان کرتے ہوئے حکومت سے مطالبہ کیا گیا کہ وہ دھاندلی پر قائم جوڈیشل کمیشن کی طرح سانحہ ماڈل ٹاؤن کمیشن کی رپورٹ بھی شائع کرے۔ کور کمیٹی کے اجلاس میں ڈاکٹر حسین محی الدین، بریگیڈیئر ر(ر) مشتاق احمد للہِ ، بشارت جسپال، فیاض وڑائچ، ایم نوراللہ،قاضی فیض السلام اور ساجد بھٹی نے شرکت کی جبکہ ڈاکٹر طاہر القادری کی ہدایت پر کور کمیٹی کے دو نئے ممبران میجر (ر) محمد سعید اور مخدوم ندیم ہاشمی نے بھی شرکت کی ۔کور کمیٹی کے اجلاس میں بلدیاتی انتخابات کے حوالے سے بھی تفصیلی غور کیا گیا۔

کور کمیٹی

مزید : صفحہ آخر