ایم کیو ایم اور جے یو آئی (ف) نے لچک کا مظاہرہ کیا ،سعد رفیق

ایم کیو ایم اور جے یو آئی (ف) نے لچک کا مظاہرہ کیا ،سعد رفیق

اسلام آباد(اے این این) مسلم لیگ ن کے رہنما اوروزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے کہا ہے کہ ایم کیو ایم اور جے یو آئی (ف) نے لچک کا مظاہرہ کیا،اس کا ملک کو فائدہ ہو گا،سپیکر کا الطاف سے رابطہ مدبرانہ اقدام تھا،ہم نے پی ٹی آئی کا مقدمہ ہر جگہ لڑا،ایاز صادق نے عمران خان اور ان کی جماعت کو تحمل سے برداشت کیا،اللہ خان صاحب کو عقل سلیم عطا کرے۔قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ تحریک انصاف کے ارکان کو ڈی سیٹ نہ کرنا خوش آئند ہے۔اس ضمن میں ایم کیو ایم اور جے یو آئی(ف) نے نرمی اور لچک کا مظاہرہ کیا ہے جس کا فائدہ ملک کو ہو گا۔انھوں نے کہا کہ ہم نے پی ٹی آئی کا مقدمہ ہرجگہ لڑاہے،ایاز صادق نے عمران خان اور پی ٹی آئی ارکان کو تحمل سے برداشت کیا،ہمار ے پارلیمانی قائدین نے جولچک دکھائی اس کاناجائزفائدہ اٹھایا گیا۔انہوں نے مولانا فضل الرحمان کے خطاب کو سراہتے ہوئے کہا کہ ان کے خطاب میں گنجائش اور لچک تھی۔سعد رفیق نے اسپیکر قومی اسمبلی کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے قائد ایم کیوایم الطاف حسین سے بات کرکے مدبرانہ قدم اٹھایا،اللہ اس سے خیر کاراستہ نکلا۔سعد رفیق نے کہا کہ الطاف حسین سے آپ کی ہونیوالی بات کی بڑی اہمیت ہے۔انہوں نے کہا کہ ایم کیوایم، قانون نافذ کرنیوالے اداروں کی کشمکش کو ختم ہونا چاہئے، اس سے کسی کو کچھ نہیں ملے گا،سیاست کا انداز بدل گیا، ہمیں بھی اپنے اطوار بدلنے چاہئیں،سیاسی جماعتوں کو تشدد پسند عناصر سے لاتعلقی کا اظہار کرنا چاہئے۔ خواجہ سعد رفیق نے دعا کی کہ اللہ تعالی عمران خان کو عقل سلیم عطا فرمائے، اس پر ایوان نے یک زبان ہوکر آمین کہا۔

سعد رفیق

مزید : علاقائی