شادباغ ،ظالم شخص نے بد چلنی کے شبہ پر بھابی کو زندہ جلا دیا ،ملزم فرار

شادباغ ،ظالم شخص نے بد چلنی کے شبہ پر بھابی کو زندہ جلا دیا ،ملزم فرار

  

لاہور (وقائع نگار) شادباغ کے علاقہ میں جیٹھ نے بد چلنی کے شبہ پر بھابھی کو زندہ جلا دیا اور موقع سے فرار ہو گیا ،پولیس نے متوفیہ کی لاش کو پوسٹ مارٹم کے لئے مردہ خانہ میں منتقل کر کے کارروائی کا آغاز کر دیا ۔پولیس اور اہل علاقہ کے مطابق شادباغ کی رہائشی 22سالہ سدرہ کی ڈیڑھ سال قبل وقاص نامی شخص سے شادی ہوئی تھی ۔ان کے مابین کوئی لڑائی جھگڑا نہیں تھاالبتہ اس کے جیٹھ وارث کو اپنی بھابھی سدرہ پر بد چلنی کا شبہ تھا ۔ اسی شبہ کی بنیاد پر گزشتہ روزوہ گھر میں آیا جہاں اس کی اپنی بھابھی سے تلخ کلامی ہو گئی جس پر اس نے طیش میں آ کر سدرہ کو اس کے کمرے میں بند کر دیا،اس کے ہاتھ پاؤں کپڑے سے باندھ دئے اور کمرے کے اندر اور باہر پٹرول چھڑک کر آگ لگا دی ۔آگ کی شدت اور اندر موجود پٹرول کی وجہ سے کمرے نے آگ پکڑ لی اور سدرہ بھی لپیٹ میں آ گئی اور جل کر جاں بحق ہو گئی ۔سدرہ کی چیخ و پکار سن کر اہل علاقہ بھی گھر کے باہر اکٹھے ہو گئے اور گھر کا دروازہ کھٹکھٹا کر گھر والوں کو باہر نکلنے کا کہتے رہے ۔محلہ داروں کے شور اور دروازہ پیٹنے کی آوازیں سن کر ملزم وارث نے گھر کا دروازہ اندر سے مقفل کر دیا اور سدرہ کے جل کر مرنے کا انتظار کرتا رہا ۔جب سدرہ کی چیخیں بند ہو گئیں تو اس نے کمرے کا دروازہ کھول کر اندر دیکھا اور سدرہ کی موت کا یقین ہونے پر ملزم چھت پر گیا اور ہمسایوں کی چھت کے ذریعہ موقع سے فرار ہو گیا ۔دریں اثنا اہل علاقہ نے پولیس کو اطلاع دی جنہوں نے موقع پر پہنچ کر گھر کا دروازہ توڑا اور اندر جا کر شواہد اکٹھے کر کے مقتولہ کی لاش کو پوسٹ مارٹم کے لئے مردہ خانہ میں منتقل کر دیا جبکہ واقعہ کا مقدمہ درج کرتے ہوئے شک کی بنیاد پر 3افراد کو حراست میں بھی لے لیا ہے ۔پولیس کے مطابق مقتولہ 7ماہ کی حاملہ تھی ۔

مزید :

علاقائی -